مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت یورپ کی مسئلہ کشمیر کے حوالے سے تمام پروگراموں میں مقبولیت
بریڈ فورڈ:جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت یورپ مقبوضہ کشمیر کے پہلے مرحلے25نومبر سے لے کر20دسمبر تک برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ میں کانفرنس منعقد کرے گی جبکہ برطانیہ کی چاروں سیاسی پارٹیوں کی لیڈر شپ سے ملاقاتیں کر کے مسئلہ کشمیر پر ہمنوا بنانے کیلئے لابی کرے گی،لندن کانفرنس کی میزبانی پاکستان پارلیمنٹری گروپ کے چیئرمین اینڈریو سٹینسن ایم پی،کشمیر گروپ کے وائس چیئرمین ڈیوڈ وارڈ ایم پی،لیبر پارٹی کے رہنما اور کشمیر گروپ کے وائس چیئرمین ڈیبی ابراہیم کے علاوہ لارڈ نذیر احمد آف رادھرم اور لارڈ قربان حسین لوٹن کریں گے جبکہ یورپی پارلیمنٹ میں10دسمبر کو انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پر کنزر ویٹو پارٹی کی یورپی ممبر پارلیمنٹ انتھیا میکنٹائر اور کشمیر گروپ کے چیئرمین اور لیبر گروپ لیڈر گلینس ویلموٹ کے علاوہ یورپی ممبران پارلیمنٹ افضل خان،ایشلے فوکس ایم ای پی،ٹموتھی کرک ہوپ ایم ای پی اور امجد بشیر ایم ای پی کے علاوہ مختلف یورپی ممالک کے ارکان پر مشتمل کشمیر گروپ بھی معاونت کرے گا تاکہ مقبوضہ کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں یورپی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر دونوں ایوانوں میں کشمیر پر بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد پر بھی غور و عوض کیا جائے گا،ان خیالات کا اظہار جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت یورپ کے چیئرمین راجہ نجابت حسین،سر پرست،سردار عبدالرحمان خان،یارکشائر کے چیئرمین چوہدری محمد اکرم،سیکرٹری جنرل محمد اعظم،خواتین رہنمائوں کونسلر یاسمین ڈار،شبانہ الطاف عباسی،بیرسٹر شازیہ انجم اور دیگر خواتین کے علاوہ وزیر اعظم آزاد کشمیر کے مشیر شوکت راجہ اور سابق پریس سیکرٹری محمد رشید چوہدری نے خصوصی خطاب کیا،تحریکی عہدیداروں اور ان کے معاونین اور ہمدردوں نے اس موقع پر تحریک کے مستقبل کے پروگراموں میں بھرپور تعاون کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ برطانیہ اور یورپ میں بسنے والے عوام خصوصاً خواتین نے تحریک آزادی کشمیر کیلئے عملی جدو جہد میں شریک ہو کر نہ صرف مسئلہ کشمیر کو برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ میں اجاگر کیا بلکہ مختلف سیاسی جماعتوں کے ممبران پارلیمنٹ بھی کشمیری و پاکستانی کونسلروں اور خواتین رہنمائوں کی سرگرمیوں سے بہت متاثر ہوئے ہیں۔ خواتین رہنمائوں نے کہا کہ25نومبر کو لندن کانفرنس میں برطانوی حکومت اور سیاستدانوں کو ایک واضح پیغام دیا جائے گا کہ مقبوضہ کشمیر کے نام نہاد انتخابات حق خود ارادیت کا متبادل نہیں ہو سکتے جبکہ بھارت سے مطالبہ کیا جائے گا کہ وہ کشمیری عوام کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور چارٹر کے مطابق حق دیکر عالمی برادری سے کئے گئے وعدے پورے کرے،اس کانفرنس میں برطانوی ممبران اور کشمیر دوست سیاستدانوں سے مطالبہ کیا جائے گا کہ وہ پارلیمنٹ میں فلسطین طرز کی قرارداد پاس کر کے برطانوی حکومت سے ثالثی کا مطالبہ کریں۔برطانوی پارلیمنٹ اور یورپی پارلیمنٹ میں کانفرنسوں کے بعد تحریکی عہدیداران اور خواتین رہنمائوں کا ایک وفد آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے علاوہ پاکستان کا بھی دورہ کرے گا تاکہ وہاں پر بھی کشمیری و پاکستانی نمائندوں سے مشاورت کے بعد2015کے پروگراموں کو ترتیب دیا جا سکے،اس سلسلے میں وزیر اعظم آزاد کشمیر کے مشیر حکومت شوکت راجہ ایڈووکیٹ اور سابق پریس سیکرٹری محمد رشید چوہدری کے علاوہ نارتھ ویسٹ سے چیئرمین سالار ممتاز ،احمد چشتی آزاد کشمیر کی سیاسی و مذہبی لیڈر شپ اور حریت رہنمائوں سے رابطے کریں گے۔ اس سلسلے میں تحریکی وفد اور شوکت راجہ ایڈووکیٹ نے پڑسی کے کنررویٹو ممبر پارلیمنٹ سٹیورٹ اینڈریو اور ہڈر سفیلڈ کی کنزر ویٹو پارٹی کی پارلیمانی امیدوار عطرت علی سے ملاقات کر کے مسئلہ کشمیر پر برطانوی حکومت کی طرف سے ثالثی مطالبہ کیا،شوکت راجہ نے کنٹرول لائن پر فائرنگ اور آزاد کشمیر کے علاقوں پر بھارتی فائرنگ کے بارے میں بریف کیا جبکہ راجہ نجابت حسین نے ممبر پارلیمنٹ سے مطالبہ کیا کہ وہ وزیر خارجہ فلپ ہیمنڈ کو کشمیریوں کے جذبات سے آگاہ کریں اور انتخابات کے موقع پر پارٹی منشور میں مسئلہ کشمیر کو شامل کریں۔بیورو رپورٹ:فیاض بشیر