مقبول خبریں
مئیر کونسلر جاوید اقبال نےرضاکارانہ خدمات پرتنظیم وائی فائی کو تعریفی سرٹیفکیٹ اور شیلڈ سے نوازا
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جموں و کشمیر تحریک حق خودارادیت یورپ سفارتی محاذ پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرتی رہے گی
بریڈ فورڈ : جموں و کشمیر تحریک حق خودارادیت یورپ سفارتی محاذ پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرتی رہے گی تحریکی عہدیدار 18 اکتوبر سے 8نومبر تک برطانیہ کے مختلف شہروں میں تقریبات منعقد کرنے کی منظوری دے دی جس میں برطانوی وزراء ، شیڈو وزراء اور ممبران پارلیمنٹ کے علاوہ کشمیری و پاکستانی تنظیموں ، کونسلروں اور خواتین تنظیموں کے عہدیداران شرکت کرینگے تحریک کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے مختلف شہروں میں عوامی رابطہ مہم شروع کر دی ہے جبکہ آزاد کشمیر کا یوم تاسیس 27 اکتوبر کو یوم سیاہ اور یوم شہدائے جموں پر خصوصی تقریبات بریڈ فورڈ ، مانچسٹر اور لندن میں منعقد کی جائینگی ۔ برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ نے معاونت کی بھر پور یقین دہانی کرائی ۔ جموں و کشمیر تحریک حق خودارادیت یورپ کے ایک مشاورتی اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کنٹرول لائن پر بگڑتی ہوئی صورتحال اور پاک بھارت مذاکرات کی معطلی کے علاوہ برطانوی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر بحث اور فلسطینیوں کے حق میں قرارداد کی مظنوری کے بعد تحریکی رہنمائوں نے مستقبل کیلئے لائحہ عمل طے کر لیا ہے جس کے مطابق ملک بھر میں سیاسی رابطوں کو تیز کرتے ہوئے برطانیہ میں متحرک کشمیری و پاکستانی تنظیموں کی معاونت سے تمام اہم شہروں میں اجلاس اور تقریبات منعقد کی جائینگی تا کہ مقامی ممبران پارلیمنٹ کو کشمیریوں کے حق خودارادیت کا ہمنوا بنانے کے علاوہ برطانوی اور یورپی حکومتوں پر سیاسی دبائو بڑھایا جائے اور اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ آئندہ برسل کے انتخابات سے قبل تمام سیاسی جماعتیں مسئلہ کشمیر اور برصغیر کی نازک صورتحال سے آگاہ ہو سکیں ۔ تمام سیاسی پارٹیوں میں موجود کشمیری و پاکستانی رہنمائوں ، کونسلروں اور ممبران پارلیمنٹ کے تعاون سے انکے منشور میں مسئلہ کشمیر کو شامل کروانے کی کوششیں کی جائینگی جبکہ تمام امیدواروں کو ایک سوالنامے کے ذریعے مسئلہ کشمیر کا ہمنوا بنایا جائیگا ۔ برطانوی و یورپی پارلیمنٹ میں خصوصی اجلاس منعقد کرکے قراردادیں پاس کروائی جائینگی جو برطانوی اور یورپی حکومت تک پہنچائی جائینگی ۔ تحریکی رہنمائوں کے معاونین برطانوی وزیر اعظم ، اپوزیشن لیڈر اور لبرل لیڈر کے علاوہ یو کے انڈی پینڈنٹ پارٹی کے سربراہ تک بھی برٹش کشمیریوں کا نکتہ نظر پہنچائیں گے ۔ بھارتی سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں کشمیریوں پر مظالم کے علاوہ بلا جواز فائرنگ سے کنٹرول لائن پر کشیدگی بند کروانے پر مہم چلائی جائیگی ۔ آزاد کشمیر کا یوم تاسیس بریڈ فوردڈ میں منایا جائیگا جبکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کے داخلے پر 27 اکتوبر کو یوم سیاہ ملک بھر میں تقریبات کے ذریعے بنا کر کشمیری عوام سے یکجہتی کا مظاہرہ کیا جائیگا ۔ تحریکی رہنمائوں چیئرمین راجہ نجابت حسین ، سرپرست سردار عبدالرحمن خان ، سیکرٹری جنرل محمد اعظم ، وائس چیئرمین امجد حسین مغل ، یاکشائر کے چیئرمین چوہدری محمد اکرم کے علاوہ خواتین رہنمائوں کونسلر یاسمین ڈار ، شبانہ الطاف عباسی ، کونسلر نسرین علی ، کونسلر شاہینہ ہارون راجہ ، صائمہ ممتاز ، صبیحہ خان ، نویدہ خان ، شہناز صدیق ، کونسلر نویدہ اکرام ، کونسلر رضوانہ جمیل ، روبینہ یاسمین میر ، کلثوم اختر ، تعظیم سویز ، ڈاکٹر تسلیم طارق ، کنزرویٹو پارٹی کی پارلیمانی امیدوار ہڈرز فیلڈ ، عطرت علی ، بیگم فلک ناز احمد ، کونسلر حلیمہ خالد ، مجید شہزاد ، صائمہ یوسف کے علاوہ بنت المسلمین کی سربراہ سمیرا فرخ ، جنت الفردوس چیریٹی کی چیف ایگزیکٹو شمیم محمود ، اوورسیز پاکستانیز سالیڈیریٹی کے چیئرمین جاوید ملک ، عوامی مسلم لیگ برطانیہ کی سیکرٹری بینا خان اور دیگر رہنمائوں نے ان تقریبات کو منعقد کرانے اور مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے کی کوششو ں میں تعاون کی اپیل کرتے ہوئے تمام کشمیریوں اور پاکستانیوں سے کہا کہ وہ برطانیہ اور یورپ کے سیاستدانوں کو کشمیری عوام کے اس دیرینہ مسئلہ کی طرف توجہ دلانے میں اپنا کردار ادا کریں ۔ بیورو رپورٹ:فیاض بشیر