مقبول خبریں
جامع مسجد اولڈہم میں جشن عیدمیلادالنبیؐ کے حوالہ سے محفل کا انعقاد ،حامد سعید کاظمی و دیگر کی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
شہزادی ڈیانا کی ہلاکت بارے موصولہ نئی معلومات کی صحت کا جائزہ لیا جا رہا ہے:میٹ پولیس
لندن... میٹروپولیٹن پولیس کے مطابق وہ 1997 میں شہزادی ڈیانا اور ان کے ساتھی دودی الفائد کی ہلاکت کے بارے میں موصول ہونے والی نئی معلومات کی صحت اور اہمیت کا جائزہ لے رہے ہیں۔شہزادی ڈیانا اور ان کے ساتھی دودی الفائد کی موت کے حوالے سے میٹرو پولیٹن پولیس کو نئی معلومات موصول ہوئی ہیںجس کے بارے میں خیال ظاہر کیا جا رہا ہے کہ تازہ معلومات ایسے شواہد پر مشتمل ہے جس میں شہزادی ڈیانا کی موت کو قتل قرار دیا گیا ہے اور اس کا الزام ایک سابقہ برطانوی فوجی پر لگایا گیا ہے۔ تاہم پولیس نے واضح کیا کہ نئی معلومات کا جائزہ لینے کا مطلب یہ نہیں کہ شہزاردی ڈیانا کی ہلاکت کی تحقیقات کو دوبارہ کھولا جا رہا ہے۔ یاد رہے کہ 1997 میں فرانس کے دارالحکومت پیرس میں شہزادی ڈیانا اور دودی الفائد کار حادثے میں ہلاک ہوگئے تھے۔ 2008 میں لندن کی ایک عدالت نے انیس سو ستانوے میں شہزادی ڈیانا کی ہلاکت کی دس سال بعد تفتیش کے بارے میں فیصلہ سناتے ہوئے اسے ’خلاف قانون‘ ہلاکت قرار دیا ہے اور کہا کہ اس کے ذمہ دارگاڑی کا ڈرائیور اورگاڑی کا پیچھا کرنے والے فوٹوگرافر تھے۔ عدالت نے یہ بھی کہا کہ شہزادی ڈیانا اور ان کے قریبی ساتھی ڈوڈی الفائد نے گاڑی میں اپنے حفاظتی بند نہیں لگائے ہوئے تھے اور یہ بھی ان کی ہلاکت کا سبب بنا۔ گاڑی دودی الفائد کے ڈرائیور ہنری پال چلا رہے تھے جنہوں نے قانونی مقدار سے کہیں زیادہ شراب پی رکھی تھی اور جس کے بارے میں عدالتی تحقیق نے اتفاق کر لیا ہے کہ وہ نشے کی حالت میں تھے۔ شہزادہ چارلز اور شہزادی ڈیانا کی شادی 29 جولائی 1981 کو ہوئی تھی۔ ایک سال بعد ہی شہزادہ ولیم اور اس کے دو سال بعد شہزادہ ہیری کی ولادت ہوئی۔ ڈیانا اس وقت بیس برس کی تھیں۔ کچھ عرصے کے بعد ہی میاں بیوی میں اختلافات پیدا ہونے شروع ہو گئے اور 1993 میں جوڑے میں علیحدگی ہو گئی اور ان کی شادی باقاعدہ طور پر 1996 میں ختم ہو گئی تھی۔