مقبول خبریں
پاکستانی کمیونٹی سنٹر اولڈہم میں کپتان محمد منیر میموریل والی بال ٹورنامنٹ کا انعقاد،مانچسٹر کی جیت
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
جس لڑکی نے خواب دکھائے وہ لڑکی نابینا تھی!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تاجِ برطانیہ کو مسئلہ کشمیر حل کرانے کیلئے ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہیے،کشمیری رہنما
سلاوٴ... کشمیر ایڈوائزری کونسل کا ایک اجلاس ہواجس میں صدر ایڈوائزری راجہ محمد ایوب نے کہا کشمیریوں کی أزادی کی تحریک کودبانے کیلئے لائن أف کنٹڑول پر کشیدگی کو بڑھایا گیا ، جو بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے جس پر پوریی کشمیری قوم احتجاج اور شدید مزاحمت کرتی ہے ،کشمیری اپنی صفوں میں اتحاد اور یکسوئی پیدا کرکے مسئلہ کشمیر کو بین الاقوامی ایوانوں میں اجاگر کرنے کیلئے ایمان کی حد تک محنت اور لگن سے کام کریں ،لندن میں ہونے والا 15أگست کا کامیاب ترین مظاہرہ اس بات کی دلیل ہے کہ بھارت کسی صورت کشمیریوں کا حقِ أزادی چھین نہیں سکتا،میڈیا اینڈ انفارمیشن ایڈوائزرسردار شعیب نازش نے چیئرمین لبریشن فرنٹ یٰسین ملک اور دیگر حریت قائدین کی نظربندی کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔ چوہدری صابر حسین چیف کوآرڈینیٹر نے کہا بین الاقوامی طور پر مسئلہ کشمیر کو فعال بنانے اور کشمیر میں پائی جانیوالی کشیدگی کو دُنیا کے سامنے لا کر بھارت کو بے نقاب کرنے کی ضرورت ہے ، راجہ محمد اسحاق خان کمپین کوارڈینیٹر نے کہا کہ تاجِ برطانیہ اور قوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون کو مسئلہ کشمیر حل کرانے کیلئے ثالثی کا کردار ادا کرنا چاہیے، راجہ محمد سروپ نے کہاتقسیم کے کسی فارمولے کو کشمیر قوم پر مسلط نہیں کیا جا سکتا،کشمیر ایڈوائزری کونسل یو کے کا ایک خصوصی اجلاس جلد متوقع ہے جس میں دونوں اطراف کی کشمیری تنظیموں کے نمائندگان کوبلا تفریق مدعو کیا جا ئیگا ۔