مقبول خبریں
برطانیہ کے ابھرتے ہوئے گلوکار عثمان فاروقی کے گانے جلوہ نے دنیا بھر میں دھوم مچا دی
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تارکین وطن کیلئے ٹوری پارٹی کی پالیسیاں دورس نتائج کی حامل ہیں : کنزرویٹو فرینڈز آف پاکستان
لندن... ٹوری پارٹی نے جہاں برطانیہ کی معیشت مضبوط بنانے کے انقلابی فیصلے کے وہیں برٹش پاکستانیوں سمیت دنیا بھر سے یہاں آکر بسنے والی کمیونٹیز کو آگے بڑھنے کے مواقع فراہم کیے اب یہ یہاں بسنے والے افراد پر منحصر ہے کہ وہ مقامی سیاست میں کتنی دلچسپی لیتے ہیں ان خیالات کا اظہار بیسٹ وے گروپ کے چیف ایگز یکٹو ضمیر چودھری نے کنزرویٹو فرینڈز آف پاکستان کے شریک چیئرمین کا عھدہ سنبھالنے کے بعد سیاسی سماجی اور کاروباری شعبہ زندگی کی سرکردہ شخصیات کے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطاب میں کیا ..اس موقع پر تنظیم کے چیرمین مائیکل ویڈ اور ٹوری پارٹی کے نوجوان رہنما لارڈ طارق احمد نے بھی اظہار خیال کیا ..شرکا میں تنظیم کے ڈائریکٹر سید قمر رضا، میپ ٹریڈنگ کے چیف ایگزیکٹو مظفر چودھری، یوکے پاکستان چیمبر آف کامرس کے صدر رضی خان، جنرل سیکرٹری کامران خان، سابق صدور چیمبر ناہید رندھاوا، طارق رمضان چودھری، سمیع الله، اکرام خان سابق ممبر پنجاب اسمبلی کے علاوہ کونسلر محبوب چودھری ، نجیب احمد، چودھری ماجد اسماعیل، طارق ڈار ، سابق سینئر وزیر سندھ پیر مظہر علی شاہ اور برٹش و پاکستانی شخصیات شامل تھیں ..مقررین نے اس امر پر زور دیا کہ برطانیہ میں مقیم پاکستانیوں کو مسائل کے حل اور اپنی آواز کو موثر بنانے کے لئے مقامی سیاست میں زیادہ سے زیادہ حصّہ لینا چا ہے لارڈ طارق نے اس موقع پر بیرونس سعیدہ وارثی کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہووے کہا کہ وہ کمیونٹی کیلئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہیں، انہوں نے اپنی محنت اور جدوجہد سے ثابت کیا کہ برطانیہ میں اپنی اہلیت اور قابلیت کی بدولت اچھا مقام حاصل کرنا ممکن ہے ..مائیکل ویڈ ، لارڈ طارق احمد اور ضمیر چودھری نے مختلف سوالوں کے جواب دیتے ہوے کہا کہ ٹوری پارٹی اقدار کی حامل ہونے کی وجہ سے پاکستانیوں کے روایتی کلچر سے زیادہ قریب اور ہم آہنگ ہے ، یہی وہ مشترکہ وجوہات ہیں جو آئندہ انتخابات میں ٹوری پارٹی کی مقبولیت کو مزید اجاگر کریں گے ..آئندہ انتخابات کے لئے ٹوری پارٹی کو مزید16 ایسی نشستوں کے لئے درخواست دی گئی ہے جہاں سے برٹش پاکستانیوں کی کامیابی کے روشن امکانات ہیں ..