مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جمہوریت اور آئین کی بالادستی قائم رہنی چاہیئے اور تمام فیصلے عوامی مفاد کے تحت ہونے چاہیئں: حسین شہید
لوٹن ... آزادی بڑی نعمت ہے اس کی قدر ان اقوام سے پوچھ کر دیکھیں جو اس کے حصول میں کئی دہائیوں سے سرگرداں ہیں اور پھر بھی اس نعمت سے محروم ہیں۔ پاکستان کے سیاستدانوں کو اس آزادی کی دل و جان سے قدر کرنی چاہیئے اور باہم دست و گریبان ہونے کے بجائے ملک و قوم کیلئے مثبت اور تعمیری کاموں میں وقت صرف کرنا چاہیئے۔ ان خیالات کا اظہار ممتاز سیاسی و سماجی رہنماء سید حسین شہید سرور کی جانب سے حکومت آزادکشمیرکے سابق مشیراور سماجی تنظیم ’’انسپاڈ‘‘ کے چیئرمین سردارمحمد طاہر تبسم کے اعزاز میں یہاں ظہرانہ میں کیا گیا۔طاہرتبسم ان دنوں برطانیہ کے دورے پر ہیں۔اس موقع پر سردار اعظم خان، جہانگیر خا ن جے۔پی اور شاہد حسین سید بھی موجود تھے۔ اس دوران پاکستان اور آزادکشمیرکی موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ دونوں رہنماوؤں نے زوردیاکہ پاکستان کے موجودہ بحران کو سیاسی افہام و تفہیم اورقانون اور آئین کے مطابق حل کیاجائے ۔ تشدد اور افراتفری کسی بھی مسئلے کا حل نہیں۔جمہوری اصولوں اور آئین کی بالادستی قائم رہنے چاہیے اور عوا م کے مفاد میں فیصلے ہونے چاہیے۔ علاوہ ازیں سید حسین شہید سرور نے لوٹن کے سماجی رہنماؤوں آزاد پروانہ مغل اور صغیر احمد مغل کے سسر حاجی محمد زمان مغل کی وفات پر ان کے گھر جاکر تعزیت کی اور مرحوم کی مغفرت اور درجات کی بلندی کے لیے دعا کی.