مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستانی فلموں کے چناؤ کیلئے شرمین عبید چنوئے کی سربراہی میں آسکر ایوارڈ کمیٹی کا قیام
اسلام آباد ...ہدایتکارہ شرمین عبید چنوئے کی سربراہی میں ایک کمیٹی بنائی گئی ہے جو پاکستان کےمقامی ہدایتکاروں اور فلسازوں کی بنائی ہوئی فلموں میں سے چناؤ کرتے ہوئے بین الاقوامی زبان کی بہترین فلم کے شعبے کے مقابلوں کے لیے بھیجے گی۔ شرمین چنوئے خود بھی گزشتہ سال ایک دستاویزی فلم کی معاون ہدایتکاری پر آسکر ایوارڈ جیت چکی ہیں۔ پاکستان میں سیاسی عدم استحکام اور فوجی بغاوتوں نے جہاں معاشرے میں قدامت پسندی اور مذہبی انتہا پسندی کو فروغ دیا ہے وہیں مبصرین کے مطابق فنون لطیفہ اور بالخصوص فلمی صنعت بھی ان کے اثرات سے نا بچ سکی اور گزشتہ چند دہائیوں سے مسلسل تنزلی کا شکار رہی۔ کمیٹی کی رکن معروف اداکارہ و ہدایتکارہ ثمینہ پیرزادہ کا کہنا ہےکہ موجودہ صورتحال میں پاکستانی معاشرے اور ثقافت کی درست تشہیر کے لیے یہ قدم بہت اہم ہے۔ 50 سال کے وقفے کے بعد پہلی مرتبہ پاکستانی فلم کو بین الاقوامی فلم ایوارڈز آسکر کے لیے بھیجا جارہا ہے.. 60 کی دہائی میں جاگا ہوا سویرا اور گھونگھٹ وہ دو پاکستانی فلمیں تھیں جو آسکر ایوارڈ کے لیے بھیجی گئی تھیں۔ اخباری معلومات کے مطابق راواں سال اب تک 21 پاکستانی فلمیں ریلیز ہوچکی ہیں۔ آسکر ایوارڈز کے لیے کوئی بھی فلمساز کمیٹی کے پاس انٹری یکم اکتوبر تک بھیج سکتا ہے۔