مقبول خبریں
نیلی مسجد یو کے اسلامک مشن کیلئے فنڈزریزنگ اپیل پر ڈنر کا اہتمام ،مئیر کونسلرمحمد زمان کی شرکت
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
کشمیر‘ جہاں خواب بھی آنسو کی طرح ہیں!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستانی فلموں کے چناؤ کیلئے شرمین عبید چنوئے کی سربراہی میں آسکر ایوارڈ کمیٹی کا قیام
اسلام آباد ...ہدایتکارہ شرمین عبید چنوئے کی سربراہی میں ایک کمیٹی بنائی گئی ہے جو پاکستان کےمقامی ہدایتکاروں اور فلسازوں کی بنائی ہوئی فلموں میں سے چناؤ کرتے ہوئے بین الاقوامی زبان کی بہترین فلم کے شعبے کے مقابلوں کے لیے بھیجے گی۔ شرمین چنوئے خود بھی گزشتہ سال ایک دستاویزی فلم کی معاون ہدایتکاری پر آسکر ایوارڈ جیت چکی ہیں۔ پاکستان میں سیاسی عدم استحکام اور فوجی بغاوتوں نے جہاں معاشرے میں قدامت پسندی اور مذہبی انتہا پسندی کو فروغ دیا ہے وہیں مبصرین کے مطابق فنون لطیفہ اور بالخصوص فلمی صنعت بھی ان کے اثرات سے نا بچ سکی اور گزشتہ چند دہائیوں سے مسلسل تنزلی کا شکار رہی۔ کمیٹی کی رکن معروف اداکارہ و ہدایتکارہ ثمینہ پیرزادہ کا کہنا ہےکہ موجودہ صورتحال میں پاکستانی معاشرے اور ثقافت کی درست تشہیر کے لیے یہ قدم بہت اہم ہے۔ 50 سال کے وقفے کے بعد پہلی مرتبہ پاکستانی فلم کو بین الاقوامی فلم ایوارڈز آسکر کے لیے بھیجا جارہا ہے.. 60 کی دہائی میں جاگا ہوا سویرا اور گھونگھٹ وہ دو پاکستانی فلمیں تھیں جو آسکر ایوارڈ کے لیے بھیجی گئی تھیں۔ اخباری معلومات کے مطابق راواں سال اب تک 21 پاکستانی فلمیں ریلیز ہوچکی ہیں۔ آسکر ایوارڈز کے لیے کوئی بھی فلمساز کمیٹی کے پاس انٹری یکم اکتوبر تک بھیج سکتا ہے۔