مقبول خبریں
سیریا ریلیف کی چیئر پرسن ڈاکٹر شمیلہ کی طرف سے چیرٹی بر نچ کا اہتمام ، کمیونٹی خواتین کی شرکت
مسئلہ کشمیر بارےیورپی پارلیمنٹ انتخابات پر برطانیہ و یورپ میں بھرپور لابی مہم چلائینگے،راجہ نجابت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
سرچ آپریشن
پکچرگیلری
Advertisement
برطانوی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر بحث رکوانے والوں کو منہ کی کھانی پڑے گی: وزیر اعظم آزاد کشمیر
لیڈز... وزیراعظم آزاد کشمیر چوہدری عبدالمجید نے کہا ہے کہ اوورسیز کشمیری مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے اور ریاست کی معیشت کو تقویت دینے میں انتہائی اہم کردار ادا کر رہے ہیں، اوورسیز کشمیریوں کے وطن میں تمام مسائل حل کریں گے ، اوورسیز کشمیری آزاد کشمیر کے اندر ہائیڈل اور سیاحت کے شعبوں میں سرمایہ کاری کریں، حکومت تمام سہولیات فراہم کرے گی۔ وہ لیڈز میں کشمیریوں کے مختلف وفود سے بات چیت کر رہے تھے۔ وزیر اعظم بریڈفورڈ سے لیڈز پہنچے تو سابق میئر لیڈز چوہدری اقبال، وزیر اعظم کے کوآرڈینیٹر اوورسیز ساجد قریشی، چوہدری قیوم، چوہدری حنیف ایڈووکیٹ اور چوہدری ادریس شان نے ان کا استقبال کیا۔ اس موقع پر پرنسپل سیکرٹری فیاض علی عباسی، پولیٹیکل سیکرٹری عامر ذیشان جرال اور پرنسپل سٹاف آفیسر مسعود الرحمن بھی موجود تھے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ بھارت کی طرف سے مسئلہ کشمیر پر دہرا معیار اپنایا جا رہا ہے ۔ ایک طرف وہ جمہوریت کی بالا دستی کی بات کرتا ہے اور دوسری طرف مقبوضہ کشمیر کے اندر عوام کے تمام انسانی و جمہوری حقوق پر ڈاکہ ڈال رہا ہے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اوورسیز کشمیریوں کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ بھارت کے اس دہرے معیار کو عالمی برادری کے سامنے لائیں۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی برطانوی پارلیمنٹ کے اندر کشمیریوں کے حق خودارادیت کے حوالے سے بات بھی ہو گی۔ اوورسیز کشمیری اپنے علاقے کے اراکین پارلیمنٹ سے رابطہ رکھتے ہوئے انہیں اصل صورت حال سے آگاہ رکھیں۔ بھارتی لابی اس بحث کو رکوانے کے لئے متحرک ہو چکی ہے مگر اسے منہ کی کھانا پڑے گی۔