مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ہم بحیثیت قوم نہ کبھی ناکام تھےنہ ہوں گے، جنرل اشفاق پرویز کیانی
کاکول... پاک فوج کے سربراہ جنرل اشفاق پرویز کیانی نے کہا ہے کہ دہشتگردی کے خلاف حکمتِ عملی پر تو دو آرا ہو سکتی ہیں لیکن اس کے سامنے جھکنا کوئی حل نہیں ہے۔ کاکول میں یومِ پاکستان کی سالانہ فوجی پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے جنرل کیانی نے کہا کہ دہشتگردوں کے خلاف کارروائی کے معاملے پر قومی اتفاقِ رائے پیدا کر کے اس پر جلد از جلد عملدرآمد ضروری ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ’ہمیں ہر ممکن کوشش کرنی چاہیے کہ کسی بھی حل پر ہر ممکن حد تک قومی اتفاقِ رائے پیدا کریں اور اس پر یکسو ہو کر جلد عمل کریں دہشتگردی کے خلاف جنگ تبھی جیتی جا سکتی ہے جب ہم سب مل کر ایک حکمتِ عملی پر متفق ہوں تاکہ نہ ہمارے ذہنوں میں ابہام رہے اور نہ ہی دہشتگردوں کے۔‘ انہوں نے کہا کہ ہماری سب سے پہلی ترجیح ملک و قوم کا مفاد ہونا چاہیے اور ہمیں یہ کبھی نہیں بھولنا چاہیے کہ آزادی ایک نعمت ہے لیکن اسے برقرار رکھنے کے لیے ہم سب کے کچھ فرائض ہیں۔‘ جنرل کیانی کا یہ بھی کہنا تھا کہ انفرادی مفادات کو قومی مفادات کی نفی کرنے کی اجازت نہیں ہونی چاہیے اور ملک و قوم کے لیے سب کو ایک ہو کر سوچنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ہم بحیثیت قوم نہ کبھی ناکام تھے اور نہ ہوں گے۔ انہوں نے قوم سے کہا کہ وہ جنگ کا فیصلہ ہونے کی صورت میں تیار رہے کیونکہ یہ ایک بھرپور کارروائی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ جس نکتے پر تمام جماعتیں متفق ہوں گی اس پر عملدرآمد کیا جائے گا۔ انھوں نے کہا کہ اگر مذاکرات کرنے ہیں تو پوری قوم کا اتفاق ہونا چاہیے اور اگر فوجی کارروائی کرنی ہے تو اس پر بھی پوری قوم کا اتفاق ہونا چاہیے۔