مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
تحریک حق خود ارادیت یورپ شعبہ خواتین کی اپوزیشن رہنما ایڈ ملی بینڈ سمیت دیگر لیبر رہنمائوں سے ملاقات
لندن،جموںکشمیر تحریک حق خود ارادیت یورپ شعبہ خواتین نارتھ ویسٹ،یارکشائر اور مڈ لینڈ کی رہنمائوں کونسلر یاسمین ڈار،کونسلر نسرین علی،یوتھ رہنما آمنہ ڈار بریڈ فورڈ کی سابق لارڈ میئر کونسلر نویدہ اکرام،برمنگھم سے برٹش کشمیری وومن کونسل کی چیئرپرسن رعنا شمع نذیر اور سیدہ سلطانہ نے تحریک کی کشمیر لابی کے دوران لیبر پارٹی کی عید ملن پارٹی میں شرکت کر کے لیبر لیڈر،ایڈ ملی بینڈ ایم پی ممبران پارلیمنٹ و وزرا ء صادق خان،شبانہ محمود،خالد محمود،یاسمین قریشی،ممبر یورپی پارلیمنٹ جولی وارڈ اور دیگر درجنوں رہنمائوں سے جہاں ملاقات کی وہاں برٹش کشمیریوں اور فلسطینیوں پر ہونے والے مظالم سے بھی لیبر رہنمائوں کو آگاہ کیا جبکہ متعدد ممبران برطانوی و یورپی پارلیمنٹ کو تحریک حق خود ارادیت یورپ کے مستقبل کے پروگراموں میں شرکت کی بھی دعوت دی اور ان تمام ارکان کا شکریہ ادا کیا جن کی معاونت سے بہت جلد برطانوی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر تفصیلی بحث ہو گی،شعبہ خواتین کی رہنمائوں نے لیبر لیڈروں سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنی1995کی کشمیر پالیسی پر عملدرآمد کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کے چارٹر اور قراردادوں کے مطابق حل کروائیں اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بھی بند کروائیں،تحریک کی ان رہنمائوں قائد تحریک راجہ نجابت حسین اور سردار عبدالرحمان خان کی طرف سے بعض ارکان کو خصوصی طور پر تعاون کی اپیل بھی کی،لیبر پارٹی کے متعدد رہنمائوں نے کشمیری خواتین کو مستقبل کے پروگراموں میں شرکت کی حامی بھرتے ہوئے تحریک کی بھرپور معاونت کی یقین دہانی کرائی۔