مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
غزہ میں جاری اسرائیلی مظالم کے خلاف اور فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے برمنگھم میں احتجاجی مظاہرہ
برمنگھم ...غزہ میں جاری اسرائیلی بربریت کے خلاف برمنگھم میں ایک بھرپور احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں ہر مکتبہ فکر کے افراد نے شرکت کی جن میں خواتین اور بچے بھی شامل تھے۔ مقررین نے اسرائیلی افواج کی نہتے عوام پر فائرنگ کی پر زور مذمت کرتے ہوئے کہا کہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں اس واقعے پر کیوں خاموش ہیں، انہوں نے کہا کہ عالمی حقوق کی بات کرنے والے جانوروں پر ظلم کے خلاف تو فوری رد عمل دیتے ہیں مگر یہاں جیتے جاگتے انسانوں کو لقمہ اجل بنایا جا رہا ہے اور کسی کے کام پر جوں تک نہیں رینگ رہی۔ مقررین نے اس بات پر زور دیا کہ اس وقت عالمی برادری کو جگانے کی ضرورت ہیں اور انہیں باور کرایا جانا ضروری ہے کہ معصوم فلسطینیوں کی نسل کشی بند کی جائے۔ اس موقع پر بعض مقررین نے شدید غصے کا بھی اظہار کیا اور اسرائیل کو دہشت گرد ملک قرار دیتے ہوئے اسے انسانیت کش جرائم پر قرار واقعی سزا کا مطالبہ کیا۔ مقررین نے کہا کہ رمضان المبارک کے بابرکت مہینے میں جب مسلمان روزے کی حالت میں ہیں ان پر قیامت ڈھائی جا رہی ہے۔ میل باکس میں منعقدہ اس احتجاجی جلسہ میں بعض شرکا مشتعل بھی ہوگئے اور انہوں نے قریبی بی بی سی کے دفتر پر یہ کہہ کر ہلہ بول دیا کہ وہ اسرائیل کا ساتھ دیتے ہوئے معصوم فلسطینیوں پر ہونے والے مظالم نہیں دکھا رہا۔ اس موقع پر مظاہرین نے شدید نعرے بازی بھی کی۔ مظاہرین نے مختلف زبانوں میں لکھے پلے کارڈ اور بینر بھی اٹھا رکھے تھے جن پر اسرائیل کے خلاف نعرے درج تھے۔ (رپورٹ و تصاویر:سفیر احمدچوہدری )