مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کشمیر چھوڑ دو تحریک،یاسین ملک سمیت لبریشن فرنٹ کے رہنما گرفتار
سرینگر :مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پولیس نے جموںو کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک کواحتجاجی مارچ کی قیادت سے روکنے کیلئے جمعہ کے روزگھر پر چھاپہ مار کر گرفتار کر لیا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پولیس نے بشیر احمدبٹ، شوکت احمد بخشی، شیخ عبدالرشید، پروفیسر جاوید احمد اور لبریشن فرنٹ کے دیگر رہنمائوں کو بھی اس وقت گرفتار کر لیا جب وہ ‘‘ کشمیر چھو ڑ دو تحریک’’ کے سلسلے میں سرینگر میں مائسمہ سے لال چوک کی طرف مارچ کر رہے تھے ۔ پولیس نے مارچ کے شرکا ء پر شدید لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا استعمال کیا جس سے متعدد لوگوں کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے ۔ دریں اثناء بھارتی پولیس نے حریت رہنما نعیم احمد خان کو بارہمولہ کے علاقے کنڈی میں عوامی اجتماع سے خطاب سے روکنے کیلئے گرفتار کرکے ٹنگمرگ تھانے میں منتقل کر دیا۔ ادھر کشمیر یونیورسٹی کے طلباء نے غزہ کے مسلمانوں کے حق میں اور اسرائیلی جارحیت کے خلاف ایک احتجاجی مظاہرہ کیا اورشدید نعرے بازی کی ، جبکہ بھارتی فوج کے ہاتھوں شہید ہونے والے مجاہد کو سپرد خاک کردیاگیا ، مجاہد کی شہادت کے خلاف قصبے اور اس کے ملحقہ علاقوں میں تیسرے دن بھی ہڑتال جاری رہی ، سڑکوں پر گاڑیوں کی آمدورفت معطل ،سرکاری اور پرائیویٹ اداروں میں کام کاج نہ ہونے کے برابر رہا ۔ دوسری جانب کل جماعتی حریت کانفرنس نے 13جولائی 1931ء کے اولین شہدائے جموں و کشمیر کی یاد میں جموں و کشمیر میں مکمل ہڑتال کی اپیل کرتے ہوئے احتجاج کا شیڈول جاری کردیا ہے ، جبکہ مظفرآباد میں متحدہ جہاد کونسل کے زیراہتمام کشمیر پر ایک خصوصی سیمینار ہوگا۔ مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس نے دی ہے جس کی تمام تنظیموں اور جماعتوں نے حمایت کی ہے ۔ سرینگر سمیت ریاست بھر میں اتوار کو تمام کاروباری مراکز بند رہیں گے جبکہ ٹریفک بھی معطل ہوگی۔ سرینگر میں حفاظتی انتظامات مزید سخت کردئیے گئے ہیں جبکہ حریت قیادت کو یوم شہدائے کشمیر کے پروگراموں میں شرکت سے روکنے کیلئے دو روز قبل ہی اپنے گھروں میں نظربند کردیا گیا ہے ۔