مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تحریک کے تمام عہدیدار یورپی ایوانوں میں مظلوم کشمیریوں کی جدوجہد کو اجاگر کرتے رہینگے:راجہ نجابت
بریڈفورڈ ... جموں کشمیر تحریک حقِ خودارادیت یورپ کے چیئرمین راجہ نجابت حسین، مسلم کانفرنس یورپ کے صدر سردار صدیق خان اورکشمیری و پاکستانی تنظیموں کے ارکان نے تحریک کی ایماء پر برطانیہ اور یورپ کے بیس سے زائد ارکان کو یورپی پارلیمنٹ میں لابی کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کشمیری عوام کو ان کے بنیادی حقوق دلوانے کیلئے بھارت اورپاکستان کو بامعنی مذاکرات جن میں کشمیری لیڈر شپ شامل ہونے پر مجبور کریں جبکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم بند کروانے کیلئے یورپی یونین اپنا کردار ادا کرے۔ برطانوی سیاسی جماعتوں کے اہم ارکان، گروپ لیڈروں اور فارن افیئرز کمیٹی کے ممبران کی طرف سے کشمیریوں کو ہر طرح کی معاونت کی یقین دھانی کرائی گئی، لیبر ارکان پارلیمنٹ اور گروپ لیڈر گلینس ویلموٹ نے سوشلسٹ گروپ سے رابطہ کرکے حسب وعدہ مسئلہ کشمیر پر بین الاقوامی کانفرنس کے انعقاد میں معاونت کی یقین دھانی کراتے ہوئے کہا کہ ان کا گروپ کشمیری عوام کے حقِ خودارادیت کے حصول میں برٹش کشمیریوں کی سفارتی جدوجہد کی بھرپور حمایت کرتا ہے اور وہ اپنے گروپ سمیت دیگر یورپی ممالک سے ارکان پارلیمنٹ کو ساتھ لیکر آل پارٹیز کشمیر گروپ کے قیام میں تعاون کریں گی۔ نئی یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر پر لابی کے حوالے سے تحریک حق خودارادیت کے زیر اہتمام پہلے پروگرام کے میزبان کنزرویٹو ممبر ٹموتھی کرک ہوپ نے اپنے خطاب میں جہاں کشمیریوں کے ساتھ اپنی ربع صدی سے وابستگی اور حمایت کو دہراتے ہوئے کہا کہ وہ حق و انصاف پر مبنی معاشرے، کشمیریوں کو انصاف دلانے اور انسانی حقوق کی پاسداری کیلئے کشمیریوں کی آواز بن کر یورپی ایوان میں دیگر ساتھیوں کے ساتھ ملکر کام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی کے اندر سید کمال ایم ای پی کی لیڈر شپ اور گروپ کے ممبر فارن افیئرز ڈاکٹر چارلس ٹینک کو بھی مشاورت میں شامل کرکے ECR گروپ کے 70 سے زائد ارکان کو اپنا ہمنوا بنانا ہوگا جبکہ وہ اس سلسلے میں ان سے بھرپور تعاون کریں گے۔ یوکے انڈی پینڈنٹ پارٹی کے گروپ لیڈر راجر ہیلمر ایم ای پی نے کہا کہ گروپ کے یارکشائر سے ممبر امجد بشیر جو کہ فارن افیئرز کمیٹی میں گروپ کی نمائندگی اور تحریک حق خودارادیت سے ملکر کام کریں گے۔ جبکہ امجد بشیر ایم ای پی نے کہا کہ وہ یوکے آئی پی کے اندر ایک موثر لابی کرتے ہوئے ہر پلیٹ فارم پر آواز اٹھائیں گے۔ انہوں نے اس موقع پر اپنی پارٹی کے ڈپٹی لیڈر پال نٹل ایم ای پی ، جوناتھن آرنٹ ایم ای پی اور دیگر ارکان سے بھی تحریکی رہنماؤں کی ملاقاتیں کروائیں اور مستقبل کے پروگراموں میں معاونت اور شرکت کی یقین دھانی بھی کرائی۔ لابی تقریب کی میزبانی یارکشائر سے کنزرویٹو ممبر نے کی جبکہ تقریب کی ابتدا یارکشائر سے لیبر رکن پارلیمنٹ رچرڈ کوربٹ نے کشمیر پٹیشن پر دستخط کرکے کی جبکہ تقریب میں شریک اور ملاقاتوں میں ملنے والے ارکان کی اکثریت نے کشمیر پٹیشن پر دستخط بھی کئے تاکہ برطانوی اور یورپی پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر بحث کروائی جاسکے اور تمام ممبران نے کشمیر گروپ میں شمولیت کی بھی حامی بھری۔ نارتھ ویسٹ سے لیبر پارٹی کی نومنختب ممبر پارلیمنٹ ٹریسا گرفن نے اپنے خطاب میں کہا کہ وہ کشمیری خواتین اور بچوں کے حقوق کیلئے جدوجہد میں معاونت کریں گی اور مقبوضہ کشمیر میں خواتین پر ہونے والی زیادتیوں کے مسئلہ کو پارلیمنٹ میں اٹھائیں گی۔ نارتھ ویسٹ سے نومنتخب لیبر ممبر پارلیمنٹ افضل خان نے دوسرے روز کے لابی پروگرام کی میزبانی کی اور اپنی پارٹی کی لیڈر سمیت دس سے زائد ارکان سے ملاقاتیں کرواتے ہوئے کشمیری تنظیم اور دیگر رہنماؤں کو یقین دلایا کہ نئی پارلیمنٹ کے مختلف گروپوں اور پارٹیوں میں کشمیر دوست ارکان کی ایک بڑی تعداد منتخب ہوکر آئی ہے اور وہ کوشش کریں گے کہ آئندہ کشمیر گروپ میں یورپ کے دیگر ممالک سے سوشلسٹ گروپ کے ارکان بھی شامل ہوکر مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے سفارتی مہم میں کشمیریوں کا ہاتھ بٹائیں۔ برمنگھم سے لیبر رکن پارلیمنٹ شان سائمن نے کہا کہ وہ تحریک کی دعوت پر بہت جلد آزادکشمیر اور مقبوضہ کشمیر کا دورہ کریں گے تاکہ کشمیریوں کا نکتہ نظر پیش کرسکیں۔ کنزرویٹو پارٹی ویسٹ مڈلینڈ کی رکن پارلیمنٹ انتھیا میکنٹائر نے کشمیری وفد کو خوش آمدید کہتے ہوئے مسئلہ کشمیر کو برطانوی وزیراعظم اور وزیر خارجہ تک اٹھانے کا وعدہ کیا اور کہا کہ وہ پارٹی کانفرنس کے دوران برمنگھم میں تحریک اور کشمیری خواتین کے پروگرام میں بھی تعاون کریں گی۔ تحریک کے چیئرمین راجہ نجابت حسین نے برطانوی سیاسی جماعتوں کے ارکان کے مثبت رویئے اور تحریک کی سرگرمیوں میں مسلسل معاونت پر شکریہ ادا کیا اور اس عزم کا اعادہ کیا کہ تحریک کے تمام عہدیدار برطانیہ اور یورپ کے ہر ایوان میں اپنے مظلوم کشمیری بھائیوں کی جدوجہد کو اجاگر کرتے ہوئے ریاست کی آزادی تک بیرون ملک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔