مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مودی سرکاری کے عزائم کھل کرسامنے آگئے ، بیرسٹرسلطان
اسلام آباد:آزاد کشمیر کے سابق وزیراعظم بیرسٹر سلطان محمودچوہدری نے بھارتی وزیر اعظم کی طرف سے مبصر مشن کو نئی دہلی سے نکالنے کے حکم پر سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ نریندر مودی کے اس اقدام سے ان کے عزائم کھل کرسامنے آ گئے ہیں ،بھارتی وزیر اعظم یہ نہیں چاہتے کہ لائن آف کنٹرول پر اقوام متحدہ کے مبصر مشن موجود ہوں۔اس صورتحال پر اقوام متحدہ کو نوٹس لینا چا ہئے ۔میرے دورہ نیویارک کے دوران اقوام متحدہ کے حکام نے یہ تسلیم کیا تھا کہ مسئلہ کشمیر اب بھی ان کے ایجنڈے پر موجود ہے لیکن مودی کے ان اقدامات کے بعد ایسا لگتا ہے کہ بھارتی وزیر اعظم اقوام متحدہ کو بھی چیلنج کررہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے اسلام آباد میں اپنی رہائشگاہ پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیر اعظم نے مقبوضہ کشمیر کے دورے کے دوران اشتعال انگیز بیانات بھی دئیے ، انٹرنیشنل کمیونٹی کو اس صورتحال کا نوٹس لینا چا ہئے کیونکہ پاکستان اور بھارت دونوں ایٹمی طاقتیں ہیں اور مودی کے ایسے اقدامات ایٹمی جنگ کا باعث بن سکتے ہیں ۔