مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
آزاد کشمیر میں پیپلزپارٹی کی تاریخ مسلسل جدوجہد اور قربانیوں سے بھری پڑی ہے: شوکت راجہ
بریڈفورڈ ... آزاد کشمیر میں پیپلزپارٹی اور اس کی حکومت کی کارکردگی پارٹی کے بنیادی پروگرام کے عین مطابق ہے انہوں نے کہا کہ پارٹی کی چالیس سالہ تاریخ ایک مسلسل جدوجہد اور قربانیوں سے بھری پڑی ہے اور یہ ان ہی قربانیوں کا اعجاز ہے کہ آج آزاد کشمیر میں حقیقی معنوں میں عوام کی حکومت ہے، ان خیالات کا اظہار منگلاڈیم امور میں وزیراعظم آزاد کشمیر کے مشیر شوکت راجہ نے پیپلزپارٹی کے دیرینہ کارکن یونس جنجوعہ کی طرف سے اپنے اعزاز میں دیے گئے ایک استقبالیہ میں کیا۔ شوکت راجہ نے کہاہے کہ متاثرین منگلا ڈیم کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کے لئے خصوصی اقدامات کئے جارہے ہیں اور ان ہی مسائل کے حل کے لئے چوہدری ذوالفقار پوٹھی کو ان امور کا ڈائریکٹر جنرل تعینات کیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر کی موجودہ حکومت نے آزاد کشمیر کے ترقیاتی اور تعلیمی میدان میں تاریخی کارنامے انجام دئے ہیں اور وہ آزاد کشمیر جہاں کے طالب علم ایک میڈیکل کالج کی جدوجہد کررہے تھے آج وہاں تعلیمی میڈیکل کالجوں کے ساتھ ساتھ کئی دوسری اعلی تعلیمی درسگاہیں بھی قائم ہوچکی ہیں۔ استقبالیہ میں دوسروں کے علاوہ بریڈ فورڈ کونسل کے ڈپٹی لیڈر کونسلر عمران حسین، بریڈفورڈ پیپلزپارٹی کے جنرل سیکرٹری چوہدری حق نواز، سابق لارڈ میئر غضنفر خالق اور سابق کونسلر چوہدری الطاف حسین نے بھی شرکت کی اس سے قبل یونس جنجوعہ نے ساٹھ کی دہائی میں متاثر ہونے والے اور حال ہی میں منگلا تو توسیعی منصوبہ کے متاثرین کا تقابلی جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ توسیع منصوبہ کے بعض متاثرین کو نہ صرف یہ کہ کروڑوں روپوں کا معاوضہ ادا کیاجارہا ہے جبکہ ان میں سے بہت سے ایسے بھی ہیں جو دو دو دفعہ معاوضہ حاصل کرچکے ہیں لیکن ان کی نسبت 60کی دہائی میں بے گھر ہونے والوں میں سے بہت سے آج بھی بے گھر اور دربدر ہیں، انہوں نے اس سلسلہ میں اپنی مثال دیتے ہوئے کہا کہ متاثرہ باشندہ کی حیثیت سے انہیں چالیس برس قبل جو پلاٹ الاٹ کیا گیا تھا آج تک انہیں اس کا قبضہ نہیں مل سکا اور وہ پاکستان میں ان کے پاس سرچھپانے کو ایک تاریک کوٹھڑی بھی نہیں انہوں نے کہا کہ وہ صرف متاثرہ منگلا ڈیم ہی نہیں پیپلزپارٹی کے ایک ایسے کارکن بھی ہیں جنہوں نے کئی مرتبہ قید وبند اور تشدد بھی برداشت کیا لیکن پارٹی پرچم کو نہیں گرنے دیا انہوں نے کہا کہ انہیں اس امر پر فخر ہے کہ انہوں نے آج سے30برس قبل عوام کی فلاح کے لئے جو مطالبات رکھے تھے پیپلزپارٹی کی موجودہ حکومت نے ان پر عملدرآمد کرکے عوام کے دیرینہ مطالبات کو تسلیم کرلیا ہے انہوں نے چوہدری ذوالفقارپوٹھی کی ڈائریکٹر جنرل کی حیثیت سے تعیناتی کا خیر مقدم کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ وہ بھی اپنے والد مرحوم کے نقش قدم پر چلتے ہوئے عوامی فلاح کے منصوبوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں گے۔