مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ماہ مقدسہ میں اللہ کو ہماری بھوک اور پیاس نہیں چاہئے بلکہ پورا تقویٰ اختیار کیا جائے: پیر سید منور حسین شاہ جماعتی
بریڈفورڈ... رمضان المبارک کو اپنی زندگی میں پانے والے اور اسکی فیوض و برکات سے مستفید ہونے والے بجا طور پر دنیا کے خوشقسمت لوگ ہوتے ہیں۔ ماہ صیام برکتوں، رحمتوں اور جہنم کی آگ سے نجات کا مہینہ ہے۔ اہل ایمان اپنے آپ کو جہنم کی آگ سے بچانے کیلئے توبہ استغفار کرتے ہوئے اپنے رب کا قرب حاصل کریں۔ رب تعالٰی فرماتا ہے روزہ میرے لئے ہے اور میں اس کا اجر دوں گا۔ ان خیالات کا اظہار پیر سید منور حسین شاہ جماعتی نے اپنے دورہ بریڈفورڈ میں مریدین کی کثیر تعداد سے خصوصی کطاب میں کیا۔ مرکزی جماعت اہلسنت کے صدر پروفیسر احمد حسن ترمذی بھی اس موقع پر موجود تھے۔ پیر جماعتی نے مزید کہا ۔ اس ماہ مقدسہ میں ہر لمحہ ہر گھڑی ہر طرف اللہ رب العزت کی رحمتوں برکتوں، بخشش و مغفرت کی برسات ہوتی ہے۔ یہ بندے پر منحصر ہے کہ اسکے لئے کیا تقویٰ اختیار کرتا ہے۔ اللہ کو ہماری بھوک اور پیاس نہیں چاہئے بلکہ پورا تقویٰ اختیار کیا جائے۔ ہاتھ پاؤں، آنکھ کان سب کا روزہ ہوتا ہے۔ اگر آپ کو اس ماہ مقدسہ میں گالی بھی دے تو خاموش ہوجائیں۔ انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک اہل ایمان میں صبر استقامت برداشت پیدا کرتا ہے۔ اور دوسری طرف بنیادی ضروریات سے محروم طبقات کی پریشانیاں، تنگدستی، غربت، بے روزگاری بھی روزہ دار پر عیاں ہوتی ہے۔ بندہ مومن اپنے دوسرے مسلمان بھائیوں کی تکلیف سے آگاہ ہو جاتا ہے اور انہیں بھی دیگر سہولتیں مہیا کرنے کیلئے کردار ادا کرتا ہے۔