مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بھارت کے حالیہ الزامات: پاک بھارت اعلٰی فوجی عہدے داروں کا ’’ہاٹ لائن‘‘ پر رابطہ
کشمیر کو منقسم کرنے والی سرحد ’’لائن آف کنٹرول‘‘ پر فائرنگ سے متعلق بھارت کے حالیہ الزامات کے تناظر میں پاکستان اور بھارت کے اعلٰی فوجی عہدے داروں نے ’’ہاٹ لائن‘‘ پر رابطہ کر کے صورت حال پر تبادلہ خیال کیا۔ پاکستان میں عسکری حکام نے بتایا کہ دونوں ممالک کی افواج کے درمیان یہ رابطہ ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز کی سطح پر ہوا۔ بھارت نےدعویٰ کیا تھا کہ پاکستانی فوجیوں نے پیر اور منگل کی درمیانی شب لائن آف کنٹرول کے پونچھ سیکٹر میں فائر بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پانچ بھارتی فوجیوں کو ہلاک کر دیا تھا۔ تاہم پاکستان نے اس الزام کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ لائن آف کنٹرول پر ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔ پاکستان کے عسکری حکام نے بتایا کہ خصوصی ہاٹ لائن پر رابطے کے دوران پاکستانی فوج نے پانڈو سیکٹر میں بدھ کو بھارتی فوجیوں کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر فائرنگ پر احتجاج کیا۔ عسکری حکام کے مطابق فائرنگ کے اس تازہ واقعہ میں دو پاکستانی فوجی شدید زخمی ہوئے۔ پاکستان کا کہنا ہے کہ وہ دونوں ملکوں کے درمیان 2003ء میں طے پانے والے فائربندی کے معاہدے کی پابندی کر رہا ہے۔ دونوں ملکوں کے درمیان رواں سال کے اوائل میں بھی ایک دوسرے پر فائر بندی کی خلاف ورزی کے الزامات عائد کیے جاتے رہے ہیں جن میں چار پاکستانی اور دو بھارتی فوجی بھی ہلاک ہوئے تھے ۔