مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
کشمیر کےلئےپاک بھارت مذاکرات محض ڈھونگ ہے،عوام مایوس ہیں: کشمیری رہنما
کشتواڑ... مقبوضہ کشمیر کےعلاقے کشتواڑ میں جھڑپوں کے بعد عید کے دوسرے روز بھی کرفیو جاری ہے،پرتشدد جھڑپوں میں دو افراد ہلاک جبکہ ساٹھ سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔کشتواڑ میں عید کے روز ہنگاموں کا آغاز اس وقت ہوا جب حکومت کی حمایت اور مخالفت میں مظاہرہ کرنے والے دو گروپ آپس میں الجھ پڑے ،ہنگامہ آرائی میں دوافراد کی ہلاکت جبکہ ساٹھ سے زائد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں ۔ پر تشدد مظاہروں کے خلاف کشمیری حریت رہنماؤں اور بھارتی جنتا پارٹی کی جانب سے شٹرڈاؤن ہڑتال کا اعلان کیا گیا ہے۔ دوسری جانب کل جماعتی حریت کانفرنس کے رہنماؤں نے ایک بار پھرمقبوضہ کشمیر کے وزیراعلی عمر عبداللہ کی بھارت کیساتھ مذاکرات کی پیشکش کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ نئی دہلی تنازعہ کشمیر کے سیاسی حل کیلئے سنجیدہ نہیں ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے کہا ہے کہ وزیراعلی عمر عبداللہ مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے کچھ بھی نہیں کرسکتے کیونکہ ان کے زیادہ تر فیصلے نئی دہلی کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حریت نے فیصلہ کیا ہے کہ پاکستان بھارت وزرائے اعظم کو خطوط لکھ کر مسئلہ کشمیر کے حل کا مطالبہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ خطوط لکھنے کے بعد ہم یہ دیکھیں گے کہ دونوں وزرائے اعظم کا اس حوالے سے کیا ردعمل سامنے آتا ہے۔ حریت رہنما سید علی گیلانی نے بھی مذاکرات کی پیشکش کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ بھارت مسئلہ کشمیر کی حقیقت تسلیم کرنے کو تیار ہی نہیں ہے اور نہ ہی وہ اس مسئلے کے حل کیلئے کوئی اقدامات کرنا چاہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں اس طرح کا ڈھونگ رچایا گیا جوکہ بے سود ہے اور اب اس طرح کی ڈرامہ بازی دوبارہ کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ جے کے ایل ایف کے رہنما محمد یاسین ملک نے بھی مذاکرات کی پیشکش کو ڈھونگ قرار دیتے ہوئے کہا کہ کشمیری عوام مذاکرات اور اداروں پر امید کھوچکے ہیں۔