مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
نومنتخب چیئرمین جے کے ایل ایف یٰسین ملک کا23 جون سے کشمیر چھوڑ دو تحریک کے آغاز کرنے کا اعلان
مظفرآباد... جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے نومنتخب چیئرمین محمد یٰسین ملک نے مرکزی کنونشن کے دوران اپنے صدارتی خطاب میں بھارتی جارحیت اور یلغار کے جواب میں 23 جون سے ’’ کشمیر چھوڑ دو ‘‘ تحریک کے آغاز کرنے کا اعلان کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر میں ریاستی عوام سے اس دن مکمل ہڑتال اور لالچوک چلو کی اپیل کی۔ انہوں نے کہا کہ 66 سالوں سے بھارتیہ جنتا پارٹی ، آر ایس ایس و بجرنگ دل اوروی ایچ پی کا کشمیر کو اکھنڈ بھارت کا حصہ بنانے کے خواب کے پسِ منظر میں رچائی جانے والی تدبیریں کشمیری عوام اپنے جہد مسلسل کے ذریعے ناکام و نامراد بنائیں گے۔ لبریشن فرنٹ کے نو منتخب ترجمان نے سنٹرل انفارمیشن آفس سے تفصیلات بتاتے ہوئے کہاکی آزاد کشمیرو گلگت بلتستان زون کے علاوہ برطانیہ و یورپ ، مڈل ایسٹ اور امریکہ و کینڈا زونز نے مشتر کہ طور پر یک زبان میں ’’ کشمیر چھوڑ دو ‘‘ تحریک کو بر حق ، موزون اور وقت کی ضرورت قرار دیتے ہوئے اسے ہر سطح پر اجاگر اور کامیاب بنانے کا عہد کیا۔ ترجمان نے کہا کہ اس موقع پر آزاد کشمیر و گلگت بلتستان زون سے نو منتخب سینئر وائس چیئرمین اور شہید محمد مقبول بٹ کے ساتھی عبدالحمید بٹ نے اعلان کیا کہ ’’ کشمیر چھوڑ دو ‘ ‘ تحریک میں مذید جان ڈالنے کی غرض سے ، چیئر مین کی آواز پر لبیک کہتے ہوئے اور بالخصوص مقبوضہ کشمیر کے عوام سے اظہار یکجہتی کے طور پر احتجاجی پروگراموں کا سلسلہ جاری رکھا جائیگا۔ انہوں نے اس حولے سے پہلا احتجاجی پرو گرام اسلام آباد میں موجود اقوامِ متحدہ کے مبصر دفتر کے سامنے 25 جون بروز بدھ دن 12 بجے منعقد کرنے کا اعلان کیا ہے جہاں بھارتی عزائم کے خلاف احتجاجی دھرنادیا جا ئیگااور اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون کے نام ایک یاداشت بھی پیش کی جائیگی۔ واضح رہے کہ فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے ۱۴ جون ۲۰۱۴ ؁ء کے روز پارٹی کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ آج ایک بار پھر ویسا ہی موقع آیا ہے جیسا 1975 ؁ء میں تب تھا جب ایک ایکارڈکے ذریعے کشمیر کی تحریک آزادی کو دفن کرنے کی ناکام سازش کی گئی اور تحریک کو زندہ کرنے کیلئے ایک شخص جو تین کمسن بچوں کا باپ تھا۔ جس کی عمر ۴۰ برس سے زیادہ ہوچکی تھی۔جو اعلیٰ تعلیم یافتہ تھا اور دو تنظیموں کا سربراہ تھا میدان عمل میں کود پڑا۔ یہ شہید محمد مقبول ؒ بٹ تھے جنہوں نے عیش کوشی کو خیر باد کہا اور اعلان کیا کہ تحریک کو لیڈر کی نہیں ایک کارکن اورقربانی کی ضرورت ہے۔وہ تمام تر مشکلات اور مخالفتوں کے باوجود کشمیر آیا اور یہاں تختہ دار کو لبیک کہہ کر تحریک آزادی کو نئی زندگی بخش گیا۔یاسین ملک کا کہنا تھا کہا کہ بھارتی جنتا پارٹی جو آر ایس ایس کی سوچ کے مطابق کشمیر کو بھارت کی ریاست کے ساتھ ضم کردینے کا منصوبہ رکھتی ہے 23جون کو اپنے لیڈر شاما پرساد مکھرجی کی یاد میں ’ کشمیر کو بھارت میں مکمل ضم کردینے‘ کا دن مناتی ہے۔اسی سلسلے میں بھارتی جنتا پارٹی جو حالیہ الیکشن کے بعد بھارت میں بر سر اقتدار آچکی ہے کے لیڈران اب کے بار اس دن کو سرکاری سطح پر منانے کے اعلانات کرچکے ہیں۔ اسی دن یہ لوگ جموں میں رہائش پذیر لاکھوں شرنارتھیوں کو بھی جموں کشمیر کے مستقل باشندے بناکر یہاں کے مسلم اکثریتی کردار کو بدلنے کی بھی سعی کریں گے کیونکہ ان کا منصوبہ ہے کہ جموں کشمیر میں مسلم اکثریت کو اقلیت میں بدل دیا جائے اور پھر ریفرنڈم کرایا جائے ۔