مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستانی نژاد ڈاکٹرسجادکریم یورپی پارلیمنٹ میں اپنی پارٹی کیطرف سے صدر کا الیکشن لڑیں گے
برسلز ... یورپی پارلیمنٹ کے پہلے پاکستانی نژاد برطانوی رکن ڈاکٹر سجادکریم ای یو پارلیمنٹ کی صدارتی دوڑ میں شامل ہوگئے ہیں۔ یورپین کنزرویٹو ز اور اصلاح پسند گروپ نے انہیں اس عہدے کے امیدوار کے طورپر نامزد کیاہے۔ سجادکریم جو یورپی پارلیمنٹ میں کنزرویٹوز کے قانونی امور کے ترجمان بھی ہیں، یورپ میں کنزویٹوزکے اصلاحی ایجنڈے میں پیش پیش رہے ہیں۔ان اصلاحات میں یورپ میں ریڈ ٹیپ کا خاتمہ ، ای یو قانون سازی کے لیے نئے فریم ورک کو متعارف کروانا اور قومی پارلمان کے اختیارات اضافہ شامل ہے۔ سجادکریم جو شمال مغربی برطانیہ سے منتخب ہوئے ہیں، پہلے برطانوی مسلمان ہیں جو پہلی دفعہ 2004ء میں ای یو پارلیمنٹ کے رکن منتخب ہوئے اور گذشتہ ماہ کے یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات میں مسلسل تیسری مرتبہ کامیاب قرار پائے۔ سجادکریم اس وقت یورپی پارلیمنٹ کی مشاورتی کمیٹی برائے قواعد و ضوابط کے چیئرمین بھی ہیں ، جس کا مقصد پارلیمنٹ میں کرپشن کاخاتمہ ہے۔ سجادکریم جو برطانیہ اور پاکستان کی دوہری شہریت رکھتے ہیں، نے ای یو پارلیمنٹ میں فرینڈز آف پاکستان گروپ قائم کیا ۔ ای یو پارلیمنٹ میں کنزویٹوز کے سینئر رکن سجادکریم برطانوی وزیراعظم ڈیویڈ کیمرون کے قریبی اتحادی سمجھے جاتے ہیں۔ انھوں نے پاکستان کو جی ایس پی۔پلس کا درجہ دلوانے میں بھی اہم کرداراداکیاہے جس سے پاکستان اور یورپ کے تعلقات میں اضافہ ہواہے۔اس کاوش کے اعتراف کے طورپر پاکستان کی یونیورسٹی آف منیجمنت و ٹیکنالوجی لاہور نے انہیں ڈاکٹریٹ کی اعزازی ڈگری سے نوازا۔ برسلز میں خطاب کرتے ہوئے انھو ں نے کہاکہ آج یورپ کے لیے ایک تاریخی موقع ہے ۔ انتہاپسند قوتیں یورپی سیاست میں صرف ایک ہفتہ قبل ہی سامنے آئی ہیں۔آج یورپ کے پاس ایک موقع ہے کہ وہ ان قوتوں کو ایک ایسے مثبت پیغام کے ساتھ جواب دے جس پر ہم پر یقین رکھتے ہیں۔انھوں نے مطالبہ کیاکہ کھلے اورشفاف اذہان رکھنے والے اراکین ای یو پارلیمنٹ ان کا ساتھ دیں۔