مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان اور بھارت مزاکرات میں آرپار کشمیری سیاسی قیادت کو نظر انداز نہیں کر سکتے: چوہدری طارق فاروق
اولڈہم ... آزادکشمیر مسلم لیگ ن اولڈہم کےصدر چوہدری عبدالرزاق قادری کی رہائش گاہ پر اپنے اعزاز میں دیئے گئے عشائیہ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری طارق فاروق نے کہا ہے کہ یورپین پارلیمنٹ بین الاقوامی سطح کا ایک بہت بڑا سیاسی فورم ہے حالیہ انتخابات میں تین پاکستان نژاد برطانوی مسلمان نمائندوں کا کامیاب ہونا نہ صرف پاکستان کے عوام کیلئے باعث فخر ہے بلکہ برطانیہ و یورپ کی کمیونٹی بھی زبردست خراج تحسین کی مستحق ہے جس نے بہترین جمہوری روایات کو برقرار رکھتے ہوئے کشادہ دلی کا مظاہرہ کیا۔ ڈپٹی اپوزیشن آزادکشمیر اسمبلی نے کہا کہ اتنی کثیر تعداد میں اور طاقتور ممالک کی نمائندگی ہونے کے باعث اب ضرورت اس امر کی ہے کہ وہ اپنی کمیونٹی کی ترقی و خوشحالی کے ساتھ ساتھ پاکستان و کشمیر کو درپیش مسائل کے حل کیلئے متفقہ طور پر ایک پلیٹ فارم سے جدوجد کریں تو میں وثوق سے کہہ سکتا ہوں کہ وہ مسئلہ کشمیر جیسے دیرینہ تنازع کو احسن طریقہ سے حل کرانے میں بھی معاون ثابت ہوسکتے ہیں۔ ڈپٹی اپوزیشن لیڈر آزادکشمیر اسمبلی چوہدری طارق فاروق نے مزید کہا کہ یورپین پارلیمنٹ، برطانوی پارلیمنٹ اور برطانیہ کی لوکل کونسلوں میں کامیاب ہونے والے پاکستانی و کشمیری نژاد برطانوی عوامی نمائندوں کے کاندھوں پر دہری ذمہ داریوں کا بوجھ آن پڑا ہے جن کو وہ اپنی پارٹیوں کی پالیسیوں کے دائرہ کار میں رہتے ہوئے اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے برطانیہ کی ترقی و مضبوطی کے ساتھ ساتھ آبائی وطن کشمیر و پاکستان کیلئے سرمایہ افتخار ثابت ہوسکتے ہیں۔ پاکستان اور بھارت کے درمیان دیرینہ مسائل کے حل تک پائیدار اور دیر پا امن قائم ہونا ممکن نہیں ہے۔ دونوں ممالک کشمیر ایشو پر بات کرتے وقت آرپار کشمیری سیاسی قیادت کو نظر انداز نہیں کر سکتے۔ چوہدری طارق فاروق نے کہ پاکستان و بھارت جنوبی ایشیاء کی دو بڑی ایٹمی طاقتیں ہیں اور دونوں ممالک کے تعلقات بعض معاملات کی وجہ سے کشیدہ چلے آرہے ہیں جبکہ دونوں ممالک کے درمیان مسئلہ کشمیر کے تنازع کو مرکزی حیثیت حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان و بھارت دیگر مسائل باہمی بات چیت اور افہام و تفہیم سے حل تو کر سکتے ہیں لیکن مسئلہ کشمیر پر گفتگو کرتے وقت انہیں مقبوضہ کشمیر اور آزادکشمیر کی سیاسی قیادت کو اعتماد میں لئے بغیر پائیدار دیر پا حل تلاش کرنا ناگزیر ہوگا۔ اس موقع پر پاکستان مسلم لیگ ن برطانیہ کے مرکزی چیئرمین راجہ آفتاب شریف، سفارتی ونگ پاکستان مسلم لیگ ن برطانیہ و نامزد میئر امسال اولڈہم میٹروپولیٹن کونسل کونسلر عتیق الرحمٰن، حاجی چوہدری ناظم، چوہدری اقبال کسگموی، چوہدری محمود، چوہدری وحید، چوہدری اکبر ناڑوی، چوہدری اللہ دتہ، چوہدری محمد ناصر، چوہدری عبدالرشید اور دیگر متعدد کمیونتی زعماء و کارکن بھی موجود تھے۔ (بیورو رپورٹ: فیاض بشیر)