مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کشمیریوں نے بندوق پھینک دی،بھارت مسئلہ کشمیر کو حل کرے،سردار یعقوب
اسلام آباد:صدر آزاد کشمیر سردار محمد یعقو ب خان نے جموں و کشمیر پینتھرز پارٹی کے سربراہ پروفیسر بھیم سنگھ کی پاکستان آمد کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہاکہ بھیم سنگھ کشمیر کی و ہ شخصیت ہیں جن کا آزاد کشمیر ، گلگت بلتستان ، پاکستان اور سمندر پار مقیم کشمیری یکساں طور پر احترام کرتے ہیں کیونکہ انہوں نے کشمیریوں کے حقوق کی بات کرتے ہوئے ان کے مفت مقدمات لڑے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز یہاں صدارتی سیکرٹریٹ میں پروفیسر بھیم سنگھ کے اعزاز میں دئیے گئے ظہرانے کے شرکاء سے خطاب اور صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب میں راجہ فاروق حیدر ، فرزانہ یعقوب ، اظہر گیلانی بھی موجود تھے ۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ بھیم سنگھ نے ہمیشہ بھارت کے اندر کشمیریوں کا نمائندہ بن کر جراتمندی سے بات کی ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اورنریندر مودی کی ملاقات کے مثبت اثرات مرتب ہوں گے ۔ مجھے امید ہے کہ نریندر مودی مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے جراتمندانہ کردار ادا کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں نے بندوق پھینک کر ایک بار پھر امن کا موقع دیا ہے ۔ بھارتی سرکار تنازع کشمیر کو حل کرکے فائدہ اٹھائے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم جب مقبوضہ کشمیر کی آزادی کی بات کرتے ہیں تو صرف مسلمانوں کی نہیں تمام مذاہب کے ماننے والوں کے لیے آزادی کا مطالبہ کرتے ہیں ۔ ہماری خواہش ہے کہ مسلمان ، ہندو ، سکھ ، عیسا ئیوں سمیت تمام کشمیریوں کومل بیٹھنے کے مواقع فراہم کئے جائیں تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کرسکیں ۔ اقوام متحدہ کی قرار دادوں میں بھی یہی مطالبہ کیا گیا ہے ۔ جنگ کسی مسئلے کا حل نہیں۔پروفیسر بھیم سنگھ نے کہا کہ تقسیم کشمیر کو ختم کر کے اسے ایک ریاست کی شکل دی جائے ۔ بھارتی فوج کے ظلم و ستم یا کسی اور وجہ سے ہجرت کرنے والے کشمیری دوبارہ اپنے وطن آ کر آباد ہوں ۔کشمیریوں کی شناخت کوئی ختم نہیں کر سکتا ۔ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی سرکار زیادہ دیر چلنے والی نہیں ۔ اس نے اپنی تقریب حلف برداری میں وزیراعظم پاکستان کو بلا کر شرارت کی تھی لیکن نواز شریف نے اس کی چال الٹ دی ۔ قائد حزب اختلاف راجہ فاروق حیدر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے اصل فریق کشمیری ہیں’بھارت اور پاکستان کوکشمیریوں پر اعتماد کرکے کشمیری قیادت کو زیادہ سے ز یادہ مل بیٹھنے کے مواقع فراہم کرنے چاہئیں تاکہ مسئلہ کشمیر کا باعزت حل تلاش کیا جا سکے ’وزیراعظم نواز شریف نے نریندر مودی کی تقریب حلف برداری میں شرکت کرکے امن کا پیغام دیا ’ تعلقات بہتر ہونے سے امن قائم ہو گا ۔