مقبول خبریں
آشٹن گروپ کی جانب سے پوٹھواری شعر و شاعری کی محفل،شعرا نے خوب داد وصول کی
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
حریت رہنمائوں اور نوجوانوں کی پھر گرفتاریاں،مظاہرے،لاٹھی چارج سے متعدد زخمی
سرینگر ...مقبوضہ کشمیر میں پولیس نے متعدد حریت رہنمائوں اور بے گناہ نوجوانوں کو حراست میں لے لیا ٗ بلاجواز گرفتاریوں کے خلاف ہزاروں مشتعل افراد نے احتجاجی مظاہرے کئے کولگام اور پلوامہ میں گرفتاریوں کی تازہ لہر میں متعدد حریت لیڈر ، کارکنوں کے علاوہ نوجوانوں کو حراست میں لیا گیا۔ حاجن اور ملحقہ علاقوں میں پتھرائو کے الزامات میں مزید 9افراد کو گرفتار کیا گیا ، گرفتاریوں کے خلاف مختلف علاقوں میں لوگوں نے مظاہرے کئے ، پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے طاقت کا وحشیانہ استعمال کرتے ہوئے لاٹھی چارج اورآنسو گیس استعمال کی جس کے باعث متعدد کشمیری زخمی ہوگئے ، جھڑپوں کے دوران متعدد پولیس اہلکار بھی زخمی ہوئے جبکہ کل جماعتی حریت کانفرنس نے مذاکراتی عمل کیلئے اقدامات پر اتفاق کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کو حل کئے بغیر دونوں ملکوں کے درمیان خوشگوار تعلقات قائم نہیں ہوسکتے ۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق حریت کانفرنس کی ایگز یکٹو ، جنرل کونسل اور ورکنگ کمیٹی کا مشترکہ اجلاس حریت کانفرنس کے چیئرمین میرواعظ عمر فاروق کی صدارت میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ حریت کانفرنس ہمیشہ دونوں ممالک کے درمیان بہتر تعلقات کی خواہاں رہی ہے ، مذاکرات میں کشمیری قیادت کو شامل کیا جائے ۔ ادھر سانحہ شوپیاں کے پانچ سال مکمل ہونے پر آسیہ اور نیلوفر کی یاد میں (آج) جمعہ کو ضلع شوپیاں میں مکمل ہڑتال ہوگی۔ اس موقع پر تمام کاروباری مراکز‘ سرکاری و نیم سرکاری ادارے بند رہیں گے ۔ مساجد میں دونوں بیٹیوں کی مغفرت اور درجات کی بلندی کیلئے دعائیں کی جائیں گی۔ قبل ازیں اپنے بیان میں حریت رہنما سید علی گیلانی نے کہا کہ سانحہ شوپیاں کشمیر ی قوم کے اجتماعی ضمیر کیخلاف ایک سنگین حملہ تھا اور زندہ قومیں اس طرح کے واقعات کو فراموش نہیں کرتیں۔