مقبول خبریں
سیاسی ،سماجی کمیونٹی شخصیت بابو لالہ علی اصغر کا مقبوضہ کشمیر کی صورتحال بارے میٹنگ کا انعقاد
بھارتی ظلم و جبر؛ برطانیہ کے بعد امریکی اخبارات میں بھی مسئلہ کشمیر شہہ سرخیوں میں نظر آنے لگا
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت کا کشمیر پٹیشن پر دستخطی مہم کا آغاز ،10ستمبر کو پیش کی جائیگی
کافر کو جو مل جائے وہ کشمیر نہیں ہے!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
میرٹھ یونیورسٹی سے10کشمیری طلباء کو با ضابطہ فارغ کرنیکا فیصلہ، پلہالن میں ہڑتال
میرٹھ، سرینگر...بھارتی ریاست اتر پردیش کی میرٹھ یونیورسٹی کی انتظامیہ نے اْن 67کشمیری طلباء میں سے 10 کو باضابطہ طورپر فارغ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جنہیں رواں برس ایشیا کرکٹ کپ کے ایک میچ میں بھارت کے خلاف پاکستانی کرکٹ ٹیم کی جیت پر جشن منانے کی پاداش میں یونیورسٹی سے بے دخل کر دیا گیاتھا۔ کشمیری طلباء کے خلا ف میرٹھ کی پولیس نے بغاوت کا مقدمہ بھی درج کیا تھا جو بعد میں واپس لے لیا گیا تھا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق یونیورسٹی کی انتظامیہ نے معاملے کی تحقیقات کے لئے ایک خصوصی کمیٹی تشکیل دی تھی جس نے 57کشمیری طلباء کو الزامات سے بری کردیا ہے البتہ10طلباء کو ہنگامہ آرائی کرنے اور یونیورسٹی کی جائیداد کو نقصان پہنچانے کے جھوٹے الزامات کے تحت بے دخل کرنے کی سفارش کی تھی۔ وائس چانسلر پروفیسر منظور احمد نے صحافیوں کو بتایا کہ10کشمیر ی طلباء کوخارج کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ادھر مقبوضہ کشمیر میں ہلال احمد راتھر نامی نوجوان کی پہلی برسی پر ضلع بارہمولہ کے علاقے پلہالن میں مکمل ہڑتال کی گئی۔ نوجوان کو بھارتی فوجیوں نے گزشتہ برس سرینگر کے علاقے فتح کدل میں شہید کیا تھا۔ تمام دکانیں اور کاروباری مراکز بند جبکہ سڑکوں پر ٹریفک معطل رہی۔ قابض انتظامیہ نے احتجاجی مظاہروں کو روکنے کے لئے پلہالن میں بڑی تعداد میں بھارتی فوجی اور پولیس اہلکار تعینات کررکھے تھے ۔