مقبول خبریں
ایسٹرن پویلین ہال اولڈہم میں آزادکشمیر میں قائم اسلام ویلفیئر ٹرسٹ کے سالانہ چیرٹی ڈنر کا انعقاد
مسئلہ کشمیر بارےیورپی پارلیمنٹ انتخابات پر برطانیہ و یورپ میں بھرپور لابی مہم چلائینگے،راجہ نجابت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
سرچ آپریشن
پکچرگیلری
Advertisement
برطانیہ میں آباواجداد کی محنت سے آج ہم کونسلوں اور پارلیمنٹ ہائوسز میں نمائیندگی کر رہے ہیں: عمران حسین
بریڈ فورڈ ...کونسل انتخابات کیلئے آخری دن مختلف اجتماعات سے ڈپٹی کونسل لیڈر اور ان انتخابات میں لیبر کے امیدوار کونسلر عمران حسین نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی سیاست کا مقصد عوام کی خدمت ہے ا ور وہ عوام کے خادم بن کر کونسل میں گئے ہیں اور ایک خادم کی حیثیت ہی سے آج عوام کے سامنے حاضر ہیں ۔ انہوں نے کہا با الخصوص نوجوانوں کے لیے گرلنگٹن میں فنڈ کی فراہمی کروا کر نوجوانوں سے کیاگیا وعدہ پورا کردیا ہے۔ انہوں نے زور دیا کہ نوجوان تعلیم پر خصوصی توجہ دیں۔ اپنے سیاسی شعور کا مظاہرہ کرتے ہوئے سیاست میں اہم رول ادا کریں ۔ا نہوں نے نوجوانوں کو مستقبل کا معمار قرار دیتے ہوئے کہا کہ برطانیہ ہمارا اپنا ملک ہے۔ اب ہم نے کہیں نہیں جانا۔ ہمارا مرنا جینا اسی ملک کے ساتھ ہے۔ ہمیں اپنی بھلائی کے ساتھ ملک کے لیے سوچنا ہوگا۔ اگرچہ ملک کے لیے ہم ایشیائیوں نے بہت کچھ کیا ہے۔ ہمارے آباواجداد کی محنتوں سے آج ہم اس پوزیشن میں ہیں کہ برطانیہ کی پارلیمنٹ میں بھرپور نمائندگی کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ ترقی کاراستہ تعلیم سے ہی ملتا ہے۔ نوجوان منفی سرگرمیوں کو ترک کرکے تعلیم کی طرف آئیں تا کہ معاشرے میں اہم مقامی حاصل کرسکیں تاکہ کوفاشٹ تنظیم ہم پر انگلی نہ اٹھائے۔ انہوں نے کہا کہ بریٹن ٹن فرسٹ کی کارروائیوں کو ہم نے اعلیٰ سطح پر اٹھایا ہے۔ پولیس لوکل کونسل سول سوسائٹی اور دوسری تہذیب کے مذہبی ونگ اس مسئلے پر متحد ہیں۔ انہوں نے کہا برطانیہ کثیر النسلی، کثیر المذہبی اور کثیر الثقافتی ملک ہے یہاں انتہا پسندی کی کوئی گنجائش نہیں ۔