مقبول خبریں
کشمیر سالیڈیرٹی کیلئے یکم فروری سے 11فروری تک تقریبات منعقد کرائی جائیں گی
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
انڈین کشمیر،گرفتاریوں،چھاپوں،تشدد کیخلاف مکمل ہڑتال ،مظاہرے
سرینگر...مقبوضہ کشمیر میں گرفتاریوں’ چھاپوں اور تشدد کیخلاف مکمل شٹر ڈائون ہڑتال کی گئی ’ کاروباری مراکز’ بینک’ دفاتر’ تعلیمی ادارے بند’ ٹریفک کا نظام معطل’ نظام زندگی مفلوج رہا’ ہڑتال کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس نے دی تھی۔ اس موقع پر وادی میں احتجاجی مظاہرے بھی کئے گئے اورکئی مقامات پر بھارتی پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا ۔ مظاہرین نے گرفتار نوجوانوں کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا۔ ادھر میر واعظ مولوی محمد فاروق اور خواجہ عبدالغنی لون کی برسی کے سلسلے میں کل سے ہفتہ شہادت منایا جائے گا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ہفتہ شہادت منانے کا اعلان کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے کیا ہے اور اس دوران قرآن خوانی، بلڈ بینک ،سیمیناروں کا انعقاد اور ریلیوں سمیت مختلف پروگرام منعقد کئے جائیں گے ، بھارتی مظالم کو بے نقاب کیا جائے گا اور 21مئی کومقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی جائے گی۔21مئی1990 کو نامعلوم مسلح افراد نے سرینگر میں فائرنگ کرکے میر واعظ مولوی محمد فاروق اور اکیس مئی 2002 کو نامعلوم حملہ آوروں نے خواجہ عبدالغنی لون کو اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے شہید کیا تھا، ادھر حریت کانفرنس کے رہنمائوں ظفر اکبر بٹ ، محمد اعظم انقلابی نے بھارتی وزیراعظم کے خصوصی نمائندے ایس کے لامبا کے کشمیر کے بارے میں بیان کو مسترد کر دیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر بھارت اور پاکستان کے درمیان کوئی سرحدی تناز ع نہیں بلکہ بین الاقوامی طورپر تسلیم شدہ مسئلہ ہے ، سید علی گیلانی نے اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عوام مسئلہ کشمیر کا اپنی خواہشات کے منافی کوئی بھی حل ہرگز قبول نہیں کریں گے ،لامبا کا بیان بھارت کی روایتی ہٹ دھرمی کا ثبوت ہے ۔