مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
انڈین کشمیر،بھارتی ریاستی دہشتگردی کے خلاف مظاہرے،آج ہڑتال کا اعلان
سرینگر ...مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں کی طرف سے سوپور کے لوگوں کو مسلسل ہراساں کرنے اوران پر ظلم وتشدد کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیاگیا ۔ سوپور کے علاقے ہارڈ شوا میں مظاہرین کا کہنا تھا کہ بھارتی فوجیوں نے علاقے میں بڑے پیمانے پرنوجوانوں کی گرفتاری کاسلسلہ شروع کر رکھا ہے اور نوجوانوں کوبلا جواز نظربند کر کے ظلم وتشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے ۔بھارتی فوج کی 22 راشٹریہ رائفلزکے اہلکاروں نے ایک کشمیری طالب علم مدثر حسن ریشی کو فوجی کیمپ میں تشدد کا نشانہ بنایا۔ مدثر کے بھائی امتیاز احمد نے صحافیوں کو بتایا کہ ڈاکٹروں کی رپورٹ کے مطابق فوجیوں نے بندوق کے بٹوں سے مدثر کو تشدد کا نشانہ بنایااور اسے لہسن کا پانی پینے پر مجبور کیا۔ ادھر مقبوضہ کشمیر میں گرفتاریوں ، چھاپوں ، تشدد اور تلاشیوں کیخلاف کل جماعتی حریت کانفرنس (گیلانی ) گروپ کی کال پر آج مکمل ہڑتال ہوگی ،تمام کاروباری مراکز ، دفاتر ، بینک ، سرکاری و نیم سرکاری ادارے بند رہیں گے ۔ حریت کانفرنس گیلانی کی مجلس شوریٰ کا اہم اجلاس علی گیلانی کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں بھارتی پارلیمانی انتخابی ڈرامے کے بعد پیدا شدہ صورتحال کے حوالے سے تازہ ترین پیش رفت اور اخباری بیانات کا جائزہ لیا گیا اور مستقبل کی حکمت عملی پر غور و خوض کیا گیا ، ا جلاس میں پیپلز لیگ ، ڈیموکریٹک ، پولیٹیکل موومنٹ ، مسلم لیگ ، پیپلز فریڈم لیگ ، ایمپلائز موومنٹ ، ماس موومنٹ ، مسلم کانفرنس ، خواتین مرکز اور تحریک حریت کے سربراہوں اور نمائندوں نے شرکت کی ۔ اجلاس کے بعد جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ نام نہاد الیکشن کے انعقاد اور اس کے بعد کی صورتحال پر تبادلہ خیال میں الیکشن کے بائیکاٹ پر انتہائی اطمینان کا اظہار کیا گیا اور لوگوں کو مبارکباد دی گئی کامیاب بائیکاٹ سے بھارت پراضح کردیا گیا ہے کہ لوگوں نے تحریک آزادی کے ساتھ اپنی گہری وابستگی دکھائی ۔