مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کے پی کے میں اصلاحات کے لیے صرف ایک سال میں 25 نئے قوانین پر مبنی ترامیم کرچکے ہیں: اسد قیصر
لوٹن ... برطانیہ کے دورے پر آئے پاکستان تحریک انصاف خیبر پختون خواہ کے صدر اور صوبائی اسمبلی کے سپیکر اسد قیصر کے اعزاز میں تحریک انصاف کے مقامی رہنما حافظ طارق محمود نے پارٹی کے دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر ایک استقبالیہ کا اہتمام کیا۔لارڈ قربان حصین کو بھی خصوصی طور پر مدعو کیا گیا تھا۔ اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے اسد قیصر نے کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں کی وجہ سے ہمارا چولہا جلتا ہے۔ ہم انہیں قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ چونکہ بیرون ملک سے زرمبادلہ کی صورت میں آمدنی ہی ہمارے ملک کی معیشت کو سہارا دیتی ہے۔عوام اوورسیز کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے۔ اسپیکر اسمبلی نے کہا خیبر پختون خواہ کی صوبائی حکومت نے صوبے میں نئی اصلاحات لانے کے لیے صرف ایک سال میں 25 نئے قوانین پر مبنی ترامیم کی ہے۔ جن میں کسی قسم کی سیاسی مداخلت کے بغیر احتساب ایکٹ کا ادارہ قائم کیا گیا ہے جو آزادانہ طور پر کام کرے گا اور صوبائی حکومت کے ماتحت کام نہیں کرے گا۔ تمام تر دستاویزات کے حصول کی مدت 15 دن مقرر کردی گئی ہے، کسی صوبائی رکن اسمبلی کو تعمیراتی فنڈز مہیا نہیں کئے جارہے ہیں اور نہ ہی کسی وزیر کے پاس کوئی پروٹوکول ہے، وزیراعلیٰ ہاؤس میں شکایت سیل قائم کردیا گیا ہے، سکولز کا ڈیٹابیس انٹر نیٹ پر لایا جاچکا ہے، کمیشن مافیا سے جان چھڑائی جارہی ہے، پٹواری سے زمین انتقال کراتے وقت حلف نامے پر دستخط کروائے جاتے ہیں کہ اس نے اس کام کے لیے رشوت نہیں لی ہے، اور اس کام کی شفافیت کیلئے ساڑھے سات ہزار ریٹائرڈ فوجیوں کو سپیشل فورس میں بھرتی کیا گیا ہے۔ ۔ لارڈ قربان حسین نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں جمہوری عمل جاری و ساری رہنا چاہئے اور آئین اور قانون کی عملداری اور آزاد عدلیہ پاکستان کی بقاء کے لیے ضروری ہے۔ الیکشن میں دھاندلی کا شور ہر الیکشن کے بعد زور پکڑ جاتا ہے۔ کم از کم ایک دفعہ انکوائری ہونی چاہئے، تاکہ سچ منظرعام آجائے اور آئندہ الیکشن کے شفاف بنانے کے لیے بھی اقدامات کئے جانے چاہئیں۔ حافظ طارق محمود نے کہا کہ مرکزی قیادت کارکنوں کے ساتھ رابطہ رکھے، تاکہ کارکنوں کو اپنی قیادت پر اعتماد بحال ہوسکے۔استقبالیہ میں اعجاز بٹ، سہیل امتیاز، خرم ایوب، حمید خان، عامر اعوان، محمد ظفر، محمد آصف بھٹی، فرحت شہزاد، محمد سرور، محمد سعد، علی عدنان، ڈاکٹر عمر، ڈاکٹر علی، علی عمران، محمد فیصل قریشی، یاسر محمود، مہتاب خان، ساجد اشرف، فیض گوندل، جاوید خان، فاضل خان اور دیگر شریک تھے۔ ۔ آخر میں مقامی صحافی شیراز خان کی والدہ کی وفات پر دعائے مغفرت کی گئی ۔