مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
انڈین کشمیر،مزید2نوجوان شہید،حریت کانفرنس نے احتجاجی شیڈول جاری کر دیا
سری نگر...مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع پونچھ میں دو کشمیری نوجوان شہید کر د یئے ۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق فوجیوں نے ان نوجوانوں کو ضلع پونچھ کے علاقے کالسیا میں محاصرے اور تلاشی کی ایک کارروائی کے دوران شہید کیا۔جبکہ کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میرواعظ عمر فاروق نے احتجاجی شیڈول جاری کرتے ہوئے عوام سے 21مئی کوشہید ملت کی یاد میں مکمل ہڑتال کی اپیل کی ہے ۔ میرواعظ نے کہا ہے کہ 21مئی کو شہدائے کشمیر کی یاد میں پورے جموں کشمیر میں ہمہ گیر ہڑتال رہے گی جبکہ بعد نماز ظہر مزار شہدا ء عیدگاہ سرینگر میں عظیم الشان جلسہ عام کا انعقاد کیا جائے گا ، شیڈول کے مطابق 16 مئی کو صبح دس بجے عوامی مجلس عمل کے مرکزی اورتمام ضلعی دفاتر میں شہدا ء کے ایصال ثواب کے لئے قرآن خوانی سے ان پروگراموں کا آغاز ہوگا ۔17 مئی کو جامع مسجد سرینگر کے احاطے میں عطیہ خون اور مفت طبی کیمپ لگایا جائے گا ۔ 18 مئی کو سیمینار کا انعقاد کیا جائے گا ۔ دیگر پروگراموں کی طرح 21 مئی کو مکمل ہڑتال کی جائے گی۔ ادھر حاجن قصبے میں تقریباً ڈیڑھ ہفتہ قبل غیر قانونی طور پر گرفتار کئے جانے والے کم از کم 17افراد نے اپنی رہائی کے لیے بھوک ہڑتال شروع کر دی ہے ۔ سوپور، بارہمولہ اور بانڈی پورہ میں ہفتہ کے روز بھی ہڑتال کی گئی۔ تینوں قصبوں میں دکانیں ، کاروباری مراکز بند جبکہ سڑکوں پر ٹریفک معطل رہی۔ ہڑتال کی وجہ سے سرکاری دفاتر، تعلیمی اداروں اور بینکوں میں بھی کام متاثر ہوا ۔ لوگوں کے مطابق بھارتی پولیس نے گزشتہ دو ہفتوں کے دوران سوپور، بارہمولہ اور بانڈی پورہ سے سینکڑوں افراد گرفتار کئے ہیں۔ مظاہرین گرفتار افراد کی رہائی کا مطالبہ کر رہے تھے۔