مقبول خبریں
اولڈہم ہوپ ووڈ ہاؤس ہیلتھ سنٹر میں خواتین کو آگاہی دینے کیلئے لیڈی ہیلتھ ڈے کا اہتمام
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
تحریک کشمیر ڈنمارک کے زیر اہتمام کوپن ہیگن میں اظہار یکجہتی کشمیر کانفرنس کا انعقاد
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
کشمیر‘ جہاں خواب بھی آنسو کی طرح ہیں!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
دہشت گردی کے عالمی خطرات کے پیش نظرانٹرپول کا سکیورٹی الرٹ، نئی ہدایات جاری !!
پیرس ...عالمی پولیس کی تنظیم انٹرپول نےحالیہ عرصہ میں عراق، لیبیا اور پاکستان میں جیلوں پر حملوں کے نتیجے میں فرار ہونے والے دہشت گردوں کے پیش نظر اپنے رکن ممالک کو نگرانی کے عمل کو تیز کرنے کے لیے خبردار کیا ہے۔ فرانس کے شہر لیون سے جاری کیےگئے بیان کے مطابق ان جیلوں پر حملوں میں القاعدہ کے ملوث ہونے کا شبہ ہے جن میں کئی دہشت گرد اور دوسرے جرائم پیشہ افراد فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔ انٹرپول نے اپنے ایک سو نوے ارکان کے تعاون کی درخواست کی ہے کہ وہ اس بات کا تعین کر کے بتائیں کہ کیا یہ سب حالیہ واقعات سلسہ وار ہیں اور کیا ان سب میں کوئی ربط پایا جاتا ہے یا نہیں۔ انٹرپول نے رکن ممالک سے درخواست کی ہے کہ وہ ان تمام فرار ہونے والے قیدیوں کے بارے میں ملنے والی کسی قسم کی معلومات کی تیزی سے زیر کارروائی لائیں۔ انٹرپول نے یہ بھی درخواست کی ہے کہ ان قیدیوں کے بارے میں ملنے والی تمام معلومات کو جلد از جلد انٹرپول جنرل سیکریٹریٹ کے علم میں لائیں تاکہ کسی بھی قسم کے نئے دہشت گردی کے حملے کو روکا جا سکے۔ اسی طرح انٹرپول کے چوبیس گھنٹے کام کرنے والے کمانڈ اینڈ کورڈینیشن سنٹر اور دوسرے خصوصی یونٹس ان جیل سے فرار ہونے والے قیدیوں اور اس طرح کے واقعات سے حاصل شدہ معلومات پر ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہے ہیں تاکہ فوری طور پر متعلقہ ممالک کو خبردار کیا جا سکے۔ دنیا میں ماضی قریب میں دہشت گردی کے بڑے واقعات میں سے کئی اگست کے مہینے میں ہوئے جن میں ممبئی حملے، جکارتہ کے حملے اور روس میں ہونے والے حملے شامل ہیں۔