مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تحریک پاکستان کےبعد ظہور پاکستان بہت بڑا کارنامہ ہے ،جلد بہتری بھی آئے گی: انور مسعود
اولڈہم...یوکے اسلامک مشن کے زیر انتظام ورنتھ ہائوس میں غزالی ایجوکیشن ٹرسٹ کیلئے ایک چیریٹی ڈنر منعقد کیا گیا اس میں پاکستان کے نامور دانشور و شعراء اکرام پروفیسر انور مسعود،اوریا مقبول جان اور خالد مسعود خان نے خصوصی شرکت کی،پروفیسر انور مسعود نے مختصر خطاب کے دوران کہا کہ تحریک پاکستان کےبعد ظہور پاکستان بہت بڑا کارنامہ ہے گو اس وقت مادر وطن تاریخ کے سنگین ترین حالات سے نبردآزما ہے لیکن ہمیشہ عظیم قوموں پر کڑے امتحان آتے ہیں اور ہر زوال کے بعد عروج کا ستارہ چمکتا ہے،دنیا بھر کے تمام اسلامی ممالک میں سے پاکستان واحد ایٹمی طاقت ہے جسکی بنا پر دشمن میلی آنکھ اٹھا کر نہیں دیکھتے وگرنہ بیرونی طاقتوں کی خواہش پایہ ء تکمیل پا جاتی،آخر میں انہوں نے کہا کہ رب کریم کی ذات سے امید رکھنی چاہئے نا امیدی گناہ ہے،اس کے بعد انہوں نے اپنے مخصوص انداز میں اپنی مزاحیہ،سبق آموز شاعری کے ذریعے حاضرین مجلس کو مخصوص کیا،مشہور دانشور و شاعر اوریا مقبول جان نے بھی اپنی شاعری میں پاکستان کے موجودہ حالات کی بھرپور عکاسی کی،خالد مسعود خان جو کہ اردو،پنجابی زبان کو یکجا کر کے سماجی ،سیاسی اور ذاتی حالات کا شاعری زبان میں ایسا انوکھا اور غمگین چہروں پر مسکراہٹیں بکھیرنے کا فن رکھتے ہیں جس سے بزرگوں سے لے کر بچوں تک داد دیئے بغیر نہیں رہ سکتے،یاد رہے اس چیریٹی ڈنر کی خدمت کرنے والوں نے پینتیس ہزار پونڈز کا عطیہ دے کر اعلیٰ ظرفی کا مظاہرہ کیا۔(بیورو رپورٹ: فیاض بشیر)