مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بریڈفورڈ کی مسلم آبادی کو اعضا کے عطیات کی اہمیت کااحساس دلانے کے لئے تقریب
بریڈ فورڈ ... برطانیہ میں رہائش پزیر مسلمانوں میں جسمانی اعضا عطیہ کرنے کے جزبے کو اجاگر کرنے کیلئے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں بریڈ فورڈ کے مکینوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ،اس تقریب کااہتمام رینل فزیشن اور بریڈ فورڈ ٹیچنگ ہسپتال کے ڈاکٹر جان سٹووز نے کیاتھا۔ ڈاکٹر جان سٹووز کایارک شائر اور دی ہمبر کارڈیو وسکولر ڈزیز نیٹ ورک میں گردوں کے علاج کے حوالے سے بنیادی کردارہے،جس نے آسانی کے ساتھ ٹرانسپلانٹیشن تک رسائی کو کلیدی ترجیح کی اہمیت پر روشنی ڈالی ۔ محمد اسلام اور محمد رفیق بٹ دونوں نے اس موقع پر پریزنٹیشن دی ، تقریب میں یارک شائر اور دی ہمبر کے مختلف مکاتب فکر کے لوگوں نے شرکت کی جن میں مریض ،ڈاکٹر پیوند کاری کرنے والے سرجنز اورنرسوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی ، اس تقریب کے بعد لوگوں کے تاثرات سے ظاہر ہوا کہ اس میں مریضوں کی شرکت سے لوگوں کوعطیات پر آمادہ کرنے میں مدد ملی ، تقریب میں شریک محمداسلام جو بریڈ فورڈ اور ایئرے ڈیل کڈنی پیشنٹس ایسوسی ایشن کے چیئرمین ہیں کو گزشتہ سال جولائی میں ان کے بھائی نے اپناگردہ عطیہ کیاتھاجبکہ محمد رفیق بٹ کو عطیات دینے والوں میں نام درج کرانے والے ایک مرحوم شخص کاگردہ نومبر میں لگایاگیاتھا ،ان دونوں نے عطیات دینے والوں کی تعداد میں اضافہ کرنے خاص طورپربریڈفورڈ کی مسلم آبادی کو اعضا کے عطیات کی اہمیت کااحساس دلانے کی ضرورت سے اتفاق کیا ، اس تقریب میں ان کے دوستوں اور فیملی کے ارکان نے ان دونوں کی معاونت کی ۔نیشنل کڈنی فیڈریشن کے چیئرمین کرت مودی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نیشنل ٹرانپلانٹ الائنس کی جو کہ سیاہ فاموں،ایشائی اور نسلی اقلیت کی ٹرانسپلانٹ عطیات کی مربوط آواز ہے تفصیلات بتائیں۔ کرت مودی 20 سال سے گردے کے مریض تھے اوردسمبر 2001 میں انھیں پیوند کاری کیلئے گردہ ملا۔ڈاکٹر رچرڈ بیکر،ندیم بٹ ، جان تھین ،لنڈا پکرنگ ، بریڈ فورڈ کے سابق کونسلر مختار علی اور محمد رفیق بٹ نے بھی اس موقع پر خطاب کیا اور اعضا کے عطیئے کی اہمیت اور ضرورت پر روشنی ڈالی اورتمام کمیونٹیز سے دردمندانہ اپیل کی کہ وہ لوگوں کی زندگیاں بچانے کیلئے گردوں اور دوسرے اعضا کاعطیہ دیں۔ ڈاکٹر کرت مودی نے کہا کہ ہمیں کسی قسم کی بھلائی کاکام کرتے ہوئے کچھ عطیہ کرتے ہوئے سوچنا نہیں چاہئے ، جیسا کہ ہم گناہ کرتے وقت نہیں سوچتے۔اس موقع پر صرف یہ جذبہ غالب ہونا چاہیئے کہ ہم مرجھائے چہروں کو زندگی سے بھرپور مسکراہٹ دے رہے ہیں۔