مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
اسلام جان لینے کا نہیں دوسروں کی جان بچانے کا درس دیتا ہے،محی الدین ٹرسٹ کے زیر اہتمام جلوس میلاد النبی
برمنگھم ... مسلمان کبھی بھی ظالم اور دہشت گرد نہیں ہوسکتا جس دین کی بنیاد ہی امن اور محبت پر ہو وہ دین اپنے پیروکاروں کو گلے کاٹنے اور خون خرابہ کرنے پر کیسے مائل کرسکتا ہے یہ دشمنان دین کے ہتھکنڈے ہیں جنہیں ہمیں اپنے اچھے اعمال سے رد کرنا ہے، اخوت اور بھائی چارے کی فضا قائم کرکے دوسروں کو باور کرانا ہے کہ اسلام جان لینے کا نہیں دوسروں کی جان بچانے کا درس دیتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے جامعہ محی الدین ٹرسٹ اور تکبیر ٹی وی کے زیر اہتمام میلاد النبی کے عظیم الشان جلوس اور جلسہ سے کیا جن میں پیر علایوالدین صدیقی، سابق ایم این اے حاجی محمد حنیف طیب، یاسمین قریشی ایم پی، مرزا خالد محمود ایم پی، شبانہ محمود ایم پی، نامزد لارڈ میئر برمنگھم کونسلر شفیق شاہ، امیدوار برائے یورپی پارلیمنٹ کونسلر عنصر علی، کونسلر افضل خان، راجہ نجابت حسین لارڈ میئر کونسلر ندیم چوہدری پیٹر برا، لارڈ میر والسال کونسلر محمد ندیر صاحبزادہ محمد رفیق چشتی سیالوی، مولانا بوستان القادری، سید ظفر اللہ شاہ، مولانا الطاف، ساجد یوسف اور دیگر کثیر تعداد میں کمیونٹی رہنما شامل تھے۔ اس سے قبل ) محی الدین ٹرسٹ کے زیر اہتمام برطانیہ و یورپ کا سب سے بڑا جشن عید میلادالنبی کا جلوس نکالا گیا جس میں ہزاروں عاشقان رسول و فرزندان اسلام نے شرکت کی۔ پیر علاؤ الدین صدیقی بگھی پر سوار جلوس کی قیادت کر رہے تھے۔ جلوس میں بچے، بوڑھے، جوان اور خواتین کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ برطانیہ بھر کے شہروں پیٹر برا، لوٹن، ڈربی، بولٹن، سٹوک انٹرنٹ، کوونری، بریڈ فورڈ، لیڈز، لندن سے ہزاروں لوگوں نے مختلف جلوسوں کی شکل میں بڑی جلوس میں شرکت کی۔ جسکے بعد نماز ظہر ادا کی گئی اور ازاں بعدجلسہ کی باقاعدہ کارروائی کا آغاز قاری امین چشتی کی تلاوت کلام پاک سے ہوا۔ نظامت کے فرائض ممتاز عالم دین علامہ غلام ربانی افغانی نے ادا کئے۔پیر علاؤ الدین صدیقی نے کہا کہ امت مسلمہ پر لگے دہشت گردی کے داغ کو ہم حضور شان والا سرور کائنات کی ولادت کا جشن منا کر دنیا و امن و سلامتی کا پیغام دے کر ہٹا سکتے ہیں کہ ہم اس نبی کو ماننے والے ہیں۔ جو ہر حال میں امن و سلامتی کا درس دیتے ہیں۔ حضور کی واحد ہستی ہے جس پر امت اکٹھی ہو سکتی ہے تمام مشکلات کا حل صرف نبی کریم کی ذاتِ مقدسہ سے منسلک ہونا ہے۔انہوں نے کہا آج اگر ہم یک جان ہوکر اسوہ حسنی پر عمل پیرا ہوجایئں تو تمام فرقہ بندیاں بھی ختم ہوجایئں، سب کی دنیا بھی سدھر جائے اور آخرت بھی۔ انہوں نے کہا آج برطانیہ میں مقیم مسلمانوں نے عملی طور پر بتایا ہے کہ ہم کس قدر منظم امت ہیں، اسی طرح سب مسلمانوں سے یہی گزارش ہے کہ اپنے عمل سے دنیا کو باور کرائیں کہ اسلام امن اور سلامتی کا مذہب ہے۔