مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان پریس کلب یوکے، صدر مسلم لیگ ن اور مولانا فضل الرحمان کی حامد میر پرحملے کی سخت مذمت
لندن ... کسی جیتے جاگتے انسان کو گزند پہنچانا ناصرف اسلامی اصولوں کے بلکہ دنیا کے ہر مذہب کے منافی ہے کوئی باہوش فرد کبھی کسی ذی روح کو نقصان پہنچانے کو درست قرار نہیں دے سکتا، حامد میر تو پھر ایک پڑھے لکھے اور محب وطن انسان ہیں ان پر حملہ پاکستان پر حملے کے مترادف ہے اسلئے حکومت اس کے پیچھے چھپے عناصر کو جلد بے نقاب کرے۔ ان جزبات کا اظہار پاکستان پریس کلب کے عہدیداران نے اپنے ایک مزمتی بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا زخمی حامد میر کا نام لیکر پاکستان کے ایک معتبر ادارے پر انگلیاں اٹھائی جا رہی ہیں جو غلط بات ہے، جب تک کوئی ٹھوس ثبوت سامنے نہیں آجاتا اس طرح کی غیر سنجیدہ حرکات سے اجتناب برتنا چاہیئے۔ آئی ایس آئی پاکستان کا ایک معتبر ترین ادارہ ہے جو ایسی حرکت کا سوچ بھی نہیں سکتا، اگر کسی فرد کو حامد میر سے ذاتی عناد تھا تو وہ انکا ذاتی فعل ہے اس میں ادارے کو گھسیٹنے کا مطلب وطن عزیز کو بدنام کرنا ہے۔ پریس کلب کے ارکان نے حامد میر کی جلد صحت یابی کی دعا کی اور حکومت پر زور دیا کہ وہ اس حملے کی فوری اور غیر جانبدارانہ تحقیقات کروائے۔ برطانیہ کے دورے پر آئے جمعیت علما اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے بھی اپنے ایک بیان میں اس حملے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔ انہوں نے حامد میر کی جلد صحت یا بی کی دعا کی اور کہا کہ یہ حملہ حامد میر پر نہیں بلکہ صحافت پر حملہ ہے حکومت تمام طبقات سمیت صحافی برادری کی حفاظت کے لیئے بھی اقدا مات کرے انہوں نے کہا کہ حکومت کی ذمے داری ہے وہ اس واقعہ تحقیقات کرواکر اصل حقائق قوم کے سامنے لائے ۔دریں اثنا پاکستان مسلم لیگ برطانیہ کے صدر زبیر گل نے بھی حامد میر پر قاتلانہ حملہ کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ حامد میر ایک بہادر صحافی ہیں۔ حقائق سے پردہ اٹھانا اور مسائل کو اسلوب کیساتھ پیش کرنا تاکہ انکا حل ممکن ہوسکے انکا وصف ہے اور جنہیں یہ پسند نہیں اصل میں وہی اس حملے کے محرک ہیں۔ زبیر گل نے مزید کہا کہ پاکستان کی موجودہ حکومت صحافیوں اور دانشوروں کی قدردان ہے برطانیہ میں پارٹی کے ارکان اس حملے پر افسردہ ہیں اور انکی مکمل صحت یابی کیلئے دعاگو ہیں۔