مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
قیدیوں کیلئے ڈاکٹر طاہر القادری کی علمی تحقیق پر مبنی لٹریچرکی فراہمی پر جیل حکام کا اظہار تشکر
برمنگھم ... منہاج القرآن کے زیر انتظام منہاج دعوہ پروجیکٹ کو ایچ ایم جیل برمنگھم کی انتظامیہ کی جانب سے قیدیوں کی دینی علمی ضروریات کی فراہمی کے لیے تعریفی سرٹیفیکیٹ دیا گیا ہے منہاج القرآن دعوہ پروجیکٹ کی ٹیم کچھ عرصہ سے برمنگھم کی جیل میں سزا یافتہ قیدیوں کی اخلاقی و دینی تعلیم و تربیت کے لیے شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہر القادری کی اردو و انگلش کتب اور خطابات کی آڈیو اور وڈیوزبڑی تعداد میں فراہم کر رہی ہے جس سے قیدیوں کی قابل ذکر تعداد فوائد حاصل کر رہی ہے جیل انتظامیہ نے قیدیوں میں کتابوں کے مطالعہ کے بعد آنے والی تبدیلیوں پر منہاج القرآن دعوی پروجیکٹ کے رضا کاروں کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے انھیں تعریفی سرٹیفیکیٹ دیا ہے اور اس امید کا اظہار کیا ہے کہ اس اقدام کو دیگر جیلوں تک بھی پھیلایا جائے گا برمنگھم جیل کے امام اعجاز احمد شامی نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹر محمد طاہر القادری کی تحریریں اسلام کے محبت بھرے اور برداشت و رواداری سے بھر پور ہیں جو پڑنے والے کے دل و دماغ کو روشن و منور کرتی جاتیں ہیں جیل میں قید و بندلوگوں کی زندگیوں میں منہاج دعوہ پروجیکٹ کی انوکھی سرگرمیوں سے اخلاقی و روحانی تبدیلیاں رونما ہو رہی ہیں منہاج دعوہ پروجیکٹ کے ارشد عزیز نے کہاہے کہ ان کی کوششیں محض اللہ تعالی کی رضا کے لیے ہیں اور وہ اپنے قائد ڈاکٹر طاہر القادری کی دی ہوئی تربیت کے مطابق معاشرے کے بد قسمت افراد کو واپس مثبت زندگی گذارنے کی جانب راغب کرنے کی جدوجہد کر رہے ہیں۔