مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
آپکے ووٹ کی اہمیت تبھی بڑھے گی جب آپ ذمہ داری سے اسکا استعمال کرینگے :سجاد کریم
راچڈیل ... پچھلے یورپین الیکشن میں مسلمان مخالف اور رنگ و نسل کے پجاری نام نہاد برٹش نیشنل پارٹی کے لیڈر نک گرفن ممبر آف یورپین صرف تین ہزار ووٹو ں کی لیڈ سے بن گئے وجہ یہی تھی کہ نارتھ ویسٹ کے مسلمانوں نے اپنا ووٹ کاسٹ نہیں کیا تھا اور جب وہ یورپین پارلیمنٹ میں کھڑا ہو کر مسلمانوں اور ہماری نبیؐ کے خلاف نازیبا زبان استعمال کرتا ہے تو وہ کچھ نہیں کر سکتے لہٰذا جمہوری طریقے سے ووٹ کا استعمال کرکے ان کو شکست فاش سے دوچار کریں ۔ ان خیالات کا اظہار نارتھ ویسٹ سے ممبر یورپی پارلیمنٹ اور آنیئنہ کیلئے امیدوار سجاد کریم نے راچڈیل میں منعقدہ ایک تقریب میں کیا جسکا اہتمام کنزرویٹو پارٹی اور راچڈیل بزنس فورم کے نائب چیئرمین راجہ مدثر رزاق نے ممبر آف یورپین پارلیمنٹ اور ایتھنک کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر سجاد حیدر کریم کی الیکشن مہم کے سلسلے میں کیا تھا۔ نظامت کے فرائض محمد عزیز نے سر انجام دیئے ، آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا ہونہار طالبعلم عدیل الرحمن نے اسکی سعادت حاصل کی ۔ حضور پاکؐ کی بارگاہ میں عقیدت کے پھول مولانا شبیر سیالوی نے پیش کئے ، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی ڈاکٹر سجاد حیدر کریم نے کہا کہ وہ مقامی امیدوار برائے کونسل کی حمایت کیلئے بھی یہاں آئے ہیں کیونکہ ایوان بالا پہنچنے کیلئے ایوان زیریں کی جڑیں مضبوط ہونا اور سیاسی پختگی کیلئے ایک اہم ستون اور سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جب وہ پہلی مرتبہ یورپین پارلیمنٹ کے الیکشن کیلئے میدان عمل میں آئے تو اس وقت بھی راچڈیل ٹائون سے انکو بے حد پذیرائی ملی اور وہ فخر سے یہ کہہ سکتے ہیں کہ آجتک یورپین پارلیمنٹ کے اندر انکا کمیونٹی کیلئے کردار مثالی تھا اور اس بارے میں کوئی بھی شکایت نہیں ملے گی اور اب کمیونٹی کیلئے بہت بڑا امتحان ہے کہ وہ ہونیوالے یورپین الیکشن میں اپنا کردار کیسے نبھاتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جب میں یورپین پارلیمنٹ کی سیاست کو خیر باد کہہ دونگا تو کوئی بھی ان پر انگلی اٹھا کر الزام تراشی نہیں کر سکے گا کہ انہوں نے کمیونٹی کی نمائندگی احسن طریقے سے نبھانے میں کوئی کوتاہی کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں کی نظریں انکے الیکشن پر ہیں کہ آیا ووٹنگ کی گنتی کے وقت کمیونٹی نے اپنا ووٹ دیکر مجھے کتنا مضبوط کیا ہے لہٰذا ووٹ کی اہمیت تب ہی ہے جب آپ ووٹ ڈالیں گے اور الیکشن والے دن ذمہ داری کامظاہرہ کرتے ہوئے دوسروں کو بھی ووٹ کا حق استعمال کرنے کیلئے گھروں سے نکال کر پولنگ اسٹیشن بھجیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ عوام سے ووٹ کارکردگی کی بنیاد پر لینا چاہتے ہیں ، یورپین پارلیمنٹ کے اندر تمام ریکارڈ محفوظ ہے عام آدمی کو اس تک رسائی ہے اگر واقعتاً میں نے کمیونٹی کے مسائل بارے آواز اٹھانے میں عملی اقدامات کئے ہیں تو پھر ووٹ کا حق حاصل ہے ۔ میری سیاسی طاقت آپ لوگوں کے ہاتھ میں ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ اس وقت دو مسئلے انتہائی اہم ہیں ، ایک متحدہ برطانیہ کا اور دوسرا ایک پارٹی برطانیہ کو یورپین یونین سے باہر آنے کے بارے زور دے رہی ہے ۔ سکاٹ لینڈ کے علیحدہ ملک کیلئے ریفرنڈم بہت اہم ہیں اگر سکاٹ لینڈ علیحدہ ملک بن گیا تو پھر برطانیہ کی سیکورٹی کونسل کی مستقل سیٹ خطرے میں پڑ سکتی ہے اور انڈیا مستقل ممبر بننے کیلئے پر تول رہا ہے اس ضمن میں ہم سب کو اپنا کردار جمہوری طریقے سے ادا کرنا ہو گا ۔ آخر میں انہوں نے کہا کہ اگر اپنے بچوں کو روشن مستقبل دینا ہے اور انہیں محفوظ بنانا ہے تو پھر الیکشن والے دن گھروں سے نکلیں اگر ایسا نہ کیا تو پھر پچھتانے کے سوا کچھ ہاتھ نہیں آئے گا ۔ پاکستان مسلم لیگ ن برطانیہ کے چیئرمین راجہ آفتاب شریف نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہر انسان کی اپنے اپنے حساب کے مطابق ذمہ داریاں ہوتی ہیں اور ہم کو انہیں نبھانے میں کوئی کوتاہی نہیں کرنی چاہئے ، ہمارے بھائی ڈاکٹر سجاد کریم نے جتنی کامیابیاں حاصل کیں وہ عوام کی مرہون منت ہیں اور ہمیں فخر ہے کہہم نے ماضی میں اور انشااللہ مستقبل میں بھی ایسے شخص کو یورپین پارلیمنٹ میں پہنچائیں گے جس نے فعال کردار ادا کرکے کمیونٹی کا سر فخر سے بلند کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے لئے جی ایس پی پلس کا کارنامہ 10لاکھ روزگار کے مواقع فراہم کریگا جس سے ملک کی معیشت کو استحقام ملے گا اور لاکھوں خاندان خوشحال زندگی بسر کر سکیں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ برطانیہ میں رہتے ہوئے اگر ترقی کی منزلوں کو چھونا ہے تو پھر ذات پات سے نکل کر ذہین اور اہلیت کے حامل لوگوں کو آگے لانا ہو گا ۔ آخر میں انہوں نے اپیل کی کہ مئی میں ہونیوالے یورپین پارلیمنٹ کے الیکشن میں سجاد کریم کو ووٹ دیکر انہیں ایک مضبوط اور طاقتور سیاستدان کے روپ میں پارلیمنٹ میں بھیج کر اپنی نسلوں کے مستقبل کو روشن بنائیں ۔ تقریب کے میزبان راجہ مدثر رزاق نے خطاب کے دوران کہا کہ لوکل کونسل کے الیکشن میں بھی نوجوانوں کو الیکشن میں کامیابی دلوا کر کونسل کے اندر بھیجنے کیلئے ہم سب کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے کیونکہ لیبر پارٹی کے جتنے بھی موجودہ کونسلرز حضرات ہیں انہوں نے ووٹ لیکر کمیونٹی کی بھلائی کیلئے کوئی خاطر خواہ کارنامہ سر انجام نہیں دیا ہے اس لئے وہ عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ ٹوری امیدواروں کو ووٹ دیں تا کہ عوامی مسائل کو حل کروایا جائے ۔ آخر میں انہوں نے کہا کہ وہ مئی میں ہونیوالے الیکشن بارے منصوبہ بندی کر رہے ہیں اور مثبت نتائج کی توقع ہے لیکن کمیونٹی کو بھی سوچ سمجھ کر فیصلہ کرنا چاہئے تا کہ اجارہ داری کی سیاست کا خاتمہ کیاجا سکے ۔ پاکستان مسلم لیگ ن برطانیہ کے نائب صدر راجہ وحید لہری نے کہا کہ لیڈر کی پہچان اسکی عوام دوست پالیسیاں ہیں اور سجاد حیدر کریم کی شخصیت میں یہ نمایاں حیثیت رکھتی ہیں ۔ مسلم لیگ ن برطانیہ نارتھ ویسٹ کے صدر راجہ سجاد حسین نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کی ہدایت ہے کہ ڈاکٹر سجاد حیدر کریم کی بھر پور حمایت کی جائے کیونکہ وہ ایک اہل شخص ہیں لہٰذا وہ اس سلسلے میں اپنی تمام تر کاوشوں کو بروئے کار لائیں گے ۔ تقریب سے راجہ مشتاق ، آصف خان ، رفعت محمود غوری ، سابق کونسلر حاجی محمد شریف بریڈ فورڈ سے کنزرویٹو پارٹی کے متحرک رہنما راجہ اللہ دتہ کے علاوہ راچڈیل کے مشہور و معروف بزرگ سیاسی و سماجی شخصیت حاجی چوہدری پہلوان صاحب نے بھی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کو عملی طور پر علاقہ قرستی ، برادری ازم کے خول سے باہر نکل کر اہل لوگوں کو آگے لانا چاہئے تا کہ جس ایوان میں بھی ہمارے نمائندگان موجود ہوں وہاں پر فخر سے ہماری سر بلند ہو سکیں نہ کہ باعث ندامت ہوں ۔