مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان قونصلیٹ مانچسٹر میں یوم پاکستان کی تقریب تمام سیاسی پارٹیوں کے نمائندوں کی شرکت
مانچسٹر ... برطانیہ کے دیگر شہروں کی طرح مانچسٹر میں بھی یوم پاکستان کی تقریب پورے جوش و خروش سے منائی گئی۔ اہتمام پاکستان قونصلیٹ مانچسٹر نے کیا تھا۔ اس تقریب کی خوبصورتی یہ تھی کی قونصلیٹ نے برطانیہ کی سیاست سے تعلق رکھنے والی تمام سیاسی پارٹیوں کے پاکستانی و کشمیری رہنمائوں کو مدعو کیا تھا جن میں لارڈ میئر مانچسٹر کے علاوہ ٹوری پارٹی کے ممبر یورپی پارلیمنٹ اور فرینڈز آف پاکستان گروپ کے چیئرمین سجاد کریم، سابق لارڈ میئر اور یورپی پارلیمنٹ کے لیبر پارٹی کے امیدوار افضل خان، ڈپٹی میئر ٹریفورڈ ملک عطا، حاجی عبدالغفور اختر، حاجی عبدالغفار، کونسلر رب نواز، کونسلر عابد چوہان، مولانا حبیب الرحمن، چیئرمین کنزرویٹو مانچسٹر محمد افضل، ممتاز سالار چشتی، چوہدری خورشید احمد، پی پی کے گلزار خان، نصر اللہ مغل، ایم پی چیئریمن جی ایم پی اے ہارون افضل کھٹانہ، مسلم لیگ ن نارتھ کے صدر راجہ سجاد حسین اور چوہدری مسرت علی کے علاوہ دیگر شخصیات شامل تھیں۔ قونصل جنرل ڈاکٹر ظہور احمد نے پاکستانی قومی ترانے کے دوران پاکستان کا سبز ہلالی پرچم لہرایا۔ اور صدر پاکستان اور وزیر اعظم پاکستان کا قوم کے نام پیغام پڑھ کر سنایا اور کہا کہ اوورسیز پاکستانی قوم کا سرمایہ ہیں، قونصلر جنرل ڈاکٹر ظہور اور کمیونٹی ویلفئر اتاشی قاضی ساجد محمود نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن ہماری تاریخ میں بڑی اہمیت کا حامل ہے جب نظرئے کی بنیاد پر بانی پاکستان نے اعلان کیا کہ بحیثیت مسلمان ہمیں ایک علیحدہ مملکت کی ضرورت ہے جہاں ہم اپنے نظریات، افکار اور تہذیب و تمدن کے مطابق زندگی بسر کر سکیں، انہوں نے کہا یہ ہماروں لیڈروں کا خلوص اور منزل کو پا لینے کی جستجو کا آغاز تھا جو اگلے سات سال میں مکمل ہوا اور مملکت خدادا پاکستان کا وجود عمل میں آیا۔ اس موقع پر شاعر مشرق علامہ محمد اقبال اور دیگر قومی رہنمائوں کے علاوہ قیام پاکستان کے موقع پر جان کے نزرانے پیش کرنے والوں کو بھی خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ (بیورو رپورٹ: فیاض بشیر)