مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
میرٹھ یونیورسٹی واپسی کی صورت میں ہندو انتہا پسند حملہ کر سکتے ہیں: کشمیری طلباء
سرینگر ... ایشیاء کپ میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کی جیت کی خوشیاں منانے پر یونیورسٹی سے نکالے گئے کشمیری طلباء نے واپس میرٹھ یونیورسٹی جانے سے انکار کرتے ہوئے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ واپسی کی صورت میں ہندو انتہا پسند حملہ کر سکتے ہیں۔ وہ اپنی زندگیاں خطرے میں نہیں ڈال سکتے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق میرٹھ یونیورسٹی سے نکالے گئے 67 طلباء کے داخلے بحال کر دیئے گئے تھے اور یونیورسٹی انتظامیہ نے اعلان کیا تھا کہ ایک اعلیٰ عہدیدار جلد طلباء کو لینے کشمیر جائیں گے تاہم طلباء نے واپس جانے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ بھارت میں نہ صرف ان کے کیرئیر کے ساتھ سیاست کی جاری ہے بلکہ ان کی زندگیاں بھی خطرہ میں ہیں۔ پاکستان اور آزاد کشمیر کی طرف سے بھرپور اخلاقی سپورٹ حاصل کرنے والےطلباء کا کہنا تھا کہ وہ انتہائی خوفزدہ ہیں چونکہ واپسی پر انتہا پسند ہندو ان پر حملے کر سکتے ہیں۔