مقبول خبریں
مکس مارشل آرٹ کونسل اور چیریٹی آرگنائزیشن کے زیر اہتمام تقریب کا انعقاد
بریگزیٹ بحران :کنزرویٹو پارٹی کی تین خواتین ممبر کی آزاد گروپ میں شمولیت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
غیرقانونی مقید افراد پر ریسرچ کے نتیجے میں قانون میں ماسٹر ڈگری حاصل کی: انصار برنی
لندن... عالمی انسانی حقوق کے علمبردار انصار برنی نے کہا ہے کہ انہوں نے اپنے جیسے لوگوں کو جیلوں میں غیرقانونی طور پر مقید کرنے کے معاملے پر ریسرچ کے نتیجے میں قانون میں ماسٹر ڈگری حاصل کی۔ اپنی ڈگری حاصل کرنے کے بعد نامنصفانہ طور پر قید میں رکھے گئے بچوں، معمر افراد اور معذوروں کی رہائی کیلئے جدوجہد کی۔ وہ ایف آئی آر ڈی سیمینار میں امن اور انسانیت کیلئے اپنی خدمات پر دئیے جانے والے طحہ قریشی ایم بی ای بیسٹیوز ایوارڈ کیلئے منعقدہ تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ لندن کالج آف بزنس مینجمنٹ اینڈ آئی ٹی (ایل سی بی ایم آئی ٹی ) اور فورم فار انٹرنیشنل ریلیشنز ڈیولپمنٹ (ایف آئی آر ڈی) کی جانب سے منعقدہ اس ایونٹ کی صدارت ایف آئی آر ڈی چیئرمین طحہ قریشی ایم بی ای نے کی۔ طحہ قریشی ایم بی ای نے ایونٹ کا آغاز پاکستان، فلپائن اور دیگر ممالک میں قدرتی آفات کے دوران ایف آئی آر ڈی اور ایل سی بی ایم آئی ٹی کی جانب سے کئے گئے انسانی حقوق کے اقدامات کے تعارف سے کیا، فلپائن میں حال ہی میں آنے والے سمندری طوفان ’’ہیان‘‘ سے متاثرہ لوگوں کیلئے جمع کئے گئے فنڈز ڈپٹی میئر سٹن کونسلر سٹیرز اور سٹن یونائٹڈ ایف سی کے چئیرمین بروس ایلائٹ نے فلپائنی کمیونٹی کے حوالے کئے گئے۔ یہ فنڈز فلپائنی سٹوڈینٹ کمیونٹی کی جانب سے متاثرین کی امداد کیلئے درخواست کرنے پر جمع کئے گئے تھے۔ قبل ازیں لندن میں فلپائنی قونصل جنرل سے ملاقات کر موقع پر کونسلر سٹیز نے قونصل جنرل سینن مینگالائل کو قدرتی آفت سے متاثرہ افراد کیلئے سکالر شپس پیش کی گئیں۔ عمر محمود نے سکالر شپ پروگرام پر روشنی ڈالی۔