مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کرکٹ میچ میں ہار کا بھارتی غصہ، چھ مزید طلبہ کو پاکستان کی حمائت پر اخراج کا سامنا
نوئیڈہ ... ایشیا کپ میں کشمیری طلبہ کی طرف سے پاکستانی ٹیم کو داد دینے پر بھارتیوں کا غصہ ابھی ٹھنڈا نہیں ہوا، بھارتی میڈیا کے مطابق اترپردیش کی ایک نجی تعلیمی درسگاہ میں سال اول کے چھ طلبا کو اسی جرم کی پاداش میں ادارے سے بے دخل کردیا گیا ہے۔ ان چھ میں سے چار کشمیری جبکہ دو علی گڑھ سے تعلق رکھنے والے مسلمان ہیں۔ ان پر گزشتہ ہفتے پاکستان اور ہندوستان کے درمیان کرکٹ میچ میں ٹیموں کی حمایت کرنے اور اس پر لڑائی جھگڑے کے الزامات ہیں۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ معاملہ اس وقت گھمبیر ہوگیا جب یونیورسٹی کے ایک طالبعلم نے ایک سوشل میڈیا ویب سائٹ پر مطالبہ کیا کہ ان طالبعلموں کیخلاف کارروائی ہونی چاہئے جنہوں نےمبینہ طور پر پاک و ہند کے درمیان ہونے والے ایشیا کپ میچ میں پاکستان کی حمایت کی تھی۔ اس کے بعد طالبعلموں میں اشتعال پھیل گیا اور یونیورسٹی انتظامیہ نے معاملہ بگڑنے پر مجاز اتھارٹی کو طلب کرلیا۔ ابتدائی رپورٹ میں تحریر کیا گیا ہے کہ بعض طالبعلم میچ کے دوران پاکستانی ٹیم کیلئے خوشی کا اظہار کررہے تھے اور اس کیخلاف دیگر طلبا گروہوں نے احتجاج کیا ہے۔ یہ معاملہ حل ہوگیا تھا لیکن پانچ مارچ کو ایک طالبعلم نے سوشل میڈیا ویب سائٹ پر اشتعال انگیز بیان پوسٹ کی اور کہا کہ کیمپس میں سبھارتی یونیورسٹی جیسا رد عمل دیکھنے میں کیوں نہیں آرہا۔ جس پر اکثریتی طلبہ طیش میں آگئے اور جھگڑا بڑھ گیا۔ اس کے بعد یونیورسٹی نے اپنی جانب سے انکوئری شروع کردی۔ طالبعلموں کو 15 دن کے اندر ہوسٹل سے بھی بے دخل کردیا جائے گا۔