مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
نازک صورتحال میں قوم، حکومت اور اپوزیشن کو ایک پلیٹ فارم پرمتحد ہوجانا چاہیے: لارڈ احمد
شفیلڈ ... برطانیہ میں مسلم کمیونٹی کی سرکردہ شخصیت سابق چیئرمین آل پارٹی پارلیمانی کمیٹی آن کشمیر لارڈ نذیر احمد آف رادھرم نے کہا ہے کہ پاکستانی فوجیوں کی گردنیں کا ٹ کر ان کی لاشوں سے بے حرمتی کرنے والے دہشت گرد مسلمان نہیں ہو سکتے اور ایسے دہشت گرد عناصر جو اسلام کو بندوق کی نوک پر نافذ کر نا چاہتے ہیں اور جو عورتوں اور بچوں کو بھی معاف نہیں کرتے اور ان لوگوں کو فنڈنگ کون کر رہا ہے اس امر کی کھوج لگانا بھی انتہائی ضروری ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے چیئرمین پاکستان مسلم سنٹر شفیلڈچوہدری محمد علی کی طرف سے اپنے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ لارڈ نزیر احمد نے مزید کہاکہ بین الاقوامی سازش کے تحت پاکستان کے حالات خراب کیے جارہے ہیں اور اس نازک صورت حال میں ساری پاکستانی قوم حکومت اور اپوزیشن کو ایک پلیٹ فارم پر ہونا چاہیے اور ملک دشمن عناصر کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کرنی چاہیے ۔ اب وقت آ گیا ہے کہ ساری قوم دہشت گردی کے خلاف متحد ہوجائے اور جو لوگ مزاکرات چاہتے ہیں انکے ساتھ مزاکرات کیے جائیں اور جو لوگ لڑائی چاہتے ہیں انکے ساتھ لڑائی کی جائے۔ لارڈ نذیر احمد نے وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف سے حالیہ ملاقات کا حوالہ دیتے ہو ئے کہ ملاقات انتہائی مثبت اور دوستانہ ماحول میں ہوئی جس میں انھوں نے اوورسیز پاکستانیوں کے حقوق ،آزاد کشمیر کی موجودہ صورتحال ،دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ اور بے شمار دو طرفہ امور پر بات چیت کی جس میں تارکین وطن کے مسائل کے حل کا ایجنڈا سرفہرست تھا۔ محمد نذیر اعوان نے اپنے خیا لات کا اظہار کرتے ہوئے کہا تارکین وطن کے دل پاکستان کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ تارکین وطن پاکستان کا بہت بڑا اثاثہ ہیں اور ہرسال اربوں کے حساب سے زرمبادلہ پاکستان بھیجتے ہیں اور پاکستان کی ترقی میں بڑا اہم کردار ادا کر رہے ہیں لیکن بدقسمتی سے پاکستان میں ان کی زمینوں پر زبر دستی قبضہ کر لیاجاتا ہے اور مختلف کیسوں میں پھنسا دیا جاتا ہے جسکی وجہ سے وہ دل کھول کر اب پاکستان میں سرمایا کاری کرنے سے گریز کر رہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ ور جب بھی اپ اپنے ملک میں جائیں تو وہاں کے گورنمنٹ کے سکولوں کے اندر ضرور وزٹ کریں اور ان سکولوں کو درپیش مسائل کو حل کرنے کی کوشش کریں ۔ جنرل سیکر ٹری پاکستان مسلم لیگ ن شفیلڈ برانچ عبدا لقیوم خان نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسلم سنٹر میں پاکستان قونصلیٹ کی سرجری کا انعقاد مستقل بنیادوں پر کیا جائے،جیری فیڈکس کی فیس کو ختم کیا جائے، اسلام آباد ائیرپورٹ پر اوورسیز پاکستانیوں اور کشمیریوں کے لیے ایک ہیلپ ڈیسک قائم کیا جائے ۔ تقریب سے مزید خطاب کرنے والوں میں صدر مسلم لیگ ن شفیلڈ برانچ اشفاق کیانی،چوہدری محمد علی،کونسلر جہانگیر اختر،کونسلر شفاق محمد،حاجی غلام نبی،محمد شبیر مغل،چوہدری ظہور احمد،فیاض شاہ،مختار طفیل،زاہد سلیم اور دیگر شامل تھے۔