مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
قائد ملت کی جرأت مندی، انصاف اور عوامی خدمت کی جدوجہد جاری رکھیں گے: بیرسٹر سلطان
برمنگھم ...قائد جمہوریت چوہدری نور حسین کو خراج عقیدت پیش کرنے کا صحیح طریقہ یہ ہے کہ مسئلہ کشمیر پر ملین مارچ کو کامیاب کرنے کیلئے تجدید عہد کیاجائے۔ مرحوم نے ساری زندگی کشمیر کی جدوجہد آزادی میں صرف کر دی آج ان کی روح کو خوش کرنے کیلئے ضروری ہے کہ ہم سب مسئلہ کشمیر کو دنیا میں اجاگر کرنے کیلئے متحرک ہوں اور اپنا اپنا کردار اس طریقے سے ادا کریں عالمی قوتوں کو کشمیریوں کا حق خود ارادیت دینے کے سوا کوئی چارہ نظر نہ آئے۔ ان خیالات کا اظہار سابق وزیر اعظم آزاد کشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے برمنگھم میں چوہدری نور حسین کی یاد میں منعقدہ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ۔بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے مزید کہا کہ لیڈر ہمیشہ اپنی عوام سے پہنچانا جاتا ہے اور عوام اپنے لیڈر سے پہنچانی جاتی ہے۔ اتنے مختصر وقت میں اتنے بڑے عوامی جم غفیر کا اکٹھا ہونا، قائد ملت کی مقبولیت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا عالمی سطح پر افغانستان سے نیٹو اور امریکن افواج کی آئندہ سال اخراج کا عمل شروع ہونے والا ہے۔ایسے وقت میں میرے لئے فیصلہ کرنا بڑا مشکل تھا، ابھی قائد ملت کو دنیا سے رخصت ہوئے ایک ہفتہ ہی گزرا تھا، دوسری طرف ڈیڑھ کروڑ کشمیریوں کا حقیقی نمائندہ بن کر مسئلہ کشمیر پر عالمی برادری کی حمایت حاصل کرناتھا۔ میری ذاتی پریشانی سے زیادہ کشمیر کی لاکھوں مائوں بہنوں اور عوام کی حقیقی آزادی زیادہ مقدم تھی۔یہی قائد ملت کا دیا ہوا مشن ہے، ہم اس کو مکمل کرکے دم لیں گے۔ میری پانچ برس کی وزارت عظمیٰ کے دوران میرے سیاسی حریفوں نے بھی کرپشن کا ایک الزام تک نہ لگایا۔ پاکستان کی چار حکومتوں کے ساتھ کام کیا۔ آپ نے جس طرح میراساتھ دیا۔ میں بھی عہد کرتا ہوں، میرے کسی فیصلے سے آپ کو ندامت نہ ہوگی۔ آپ کو کبھی شرمندہ نہ کروں گا۔قائد ملت کی جرأت مندی، انصاف اور عوامی خدمت کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔تقریب کاآغاز قاری عبدالغفور کی تلاوت کلام پاک سے ہوا ،عارفانہ کلام پی پی رہنما چوہدری دلپذیر نے پیش کیا۔ دیگر خطاب کرنے والوں میں پی پی مڈلینڈ کے صدر اور بیرسٹر سلطان محمودکے دست راست چوہدری خادم حسین، سابق ممبر کشمیر کونسل حمید پوٹھی، سابق لارڈ میئر ہائی ویکمب چوہدری اللہ دتہ، چوہدری ماجداسماعیل، چوہدری شعبان، چوہدری امین رٹوی، بیرسٹر کرامت حسین، چوہدری افضل، محمد فاروق مغل ایڈووکیٹ، چوہدری ضیا گورسی، فیض حمید فیضی، ڈاکٹر خورشید احمد سی بی ای، معروف صحافی ساجد یوسف، کونسلر عنصر علی خان، چوہدری ثروت ، چوہدری شبیر ، چوہدری خورشید ، چوہدری سردار علی، چوہدری افسر سٹوک آن ٹرینٹ، ماسٹر اورنگزیب ، صدر چوہدری حکمداد، چوہدری جاوید اولڈ ہم، حاجی بشیر آرائیں، ایوب سرکھوی، عامر سرکھوی اور دیگرشامل تھے۔انہوں نے تفصیل سے قائد ملت کے کارناموں پر اظہار خیال کیا اور مرحوم کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا۔