مقبول خبریں
چوہدری سعید عبداللہ ،چوہدری انور،حاجی عبدالغفار کی جانب سے حاجی احسان الحق کے اعزاز میں عشائیہ
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
دنیا مسئلہ کشمیر کی سنجیدگی کو سمجھے، اس کا حل افغانستان سے زیادہ ضروری ہے: بیرسٹر سلطان
لوٹن ... چوہدری نورحسین کی رحلت سے الحاق پاکستان اور اس کے بعد عملی طور پر تحریک آزادی کشمیر میں حصہ لینے والوں کا ایک چیپٹربند ہوگیا ہے مگر وہ اس جدوجہد کو جاری و ساری رکھیں گے۔ ان خیالات کا اظہار سابق وزیراعظم آزاد کشمیر اورپاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے سابق ممبر کشمیر کونسل چوہدری حمید پوٹھی کے بھائی اور پی پی کے رہنما چوہدری امین پوٹھی کی جانب سے چوہدری نورحسین کی یاد میں ڈالو کمیونٹی اینڈ ریسورسز سنٹر لوٹن میں منعقدہ ایک تعذیتی ریفرنس میں کیا۔ اس تعزیتی ریفرنس کی صدارت معروف سماجی کارکن اور بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کی دیرینہ ساتھی چوہادری شفاعت حسین پوٹھی نے کی۔ بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا کہ وہ حالیہ دورہ برطانیہ میں ممبران پارلیمان اور ہاؤس آف لارڈز کے علاوہ انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس اور دیگر اہم عالمی فورمزپر زور دیں گے کہ کشمیر کا مسئلہ کشمیری عوام کی خواہشات اور احساسات کے مطابق جلد حل کیا جائے۔ دیگر مقررین جن میں سابق پولیٹیکل ایڈوائزر چوہدری شعبان، ثالث رضا کیانی، پاکستان سنٹر کے چیئرمین طارق ڈار، والتھم سٹو کے سابق لارڈ مئیر کونسلر چوہدری لیاقت علی، نارتھمپٹن پاکستانی کمیونٹی کے معروف لیڈر فیض حمید فیضی، پی وائی او یورپ کے چیئرمین اظہربڑالوی، ایڈمنسٹریٹر ضلع کوٹلی چوہدری شوکت فرید و دیگر شامل تھے نے چوہدری نور حسین کی خدمات کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ چوہدری نورحسین ایسے بڑے رہنما تھے کہ جنہوں نے اپنا آپ قوم کیلئے وقف کر رکھا تھا اورتحریک آزادی کیلئے گراں قدر خدمات انجام دیں۔ چوہدری نورحسین حضرت قائد اعظم کو اپنا لیڈر مانتے تھے اور انہوں نے کشمیر کی آزادی کیلئے سلطان محمود کی تربیت بانی پاکستان کے کردار کو سامنے رکھ کر کی، یقیناً تحریک آزادی کشمیر سلطان محمود کی قیادت میں کامیابی سے ہمکنار ہوگی۔ چوہدری ماجد اسمٰعیل‘ علامہ ارشد‘ بیرسٹر سلطان محمود کے پولیٹیکل کوآرڈی نیٹر چوہدری محمد شعبان، اسلامک کلچرل سوسائٹی لوٹن کے صدر چوہدری محمد شفاعت پوٹھی اور سابق صدر اسلامک کلچرل سوسائٹی اور رہنما پی پی حاجی چوہدری محمد سلیمان کو بیرسٹر سلطان محمود کے ساتھ سٹیج پر بٹھایا گیا تھا جبکہ تقریب کے دیگر نمایاں شرکا میں لندن کی سماجی شخصیت مرزا خان، چشم کے کونسلر محمد بھٹی، والتھم سٹو کے مئیر چوہدری ندیم علی، حافظ اعجاز احمد، بریڈ فورڈ سے چوہدری شبیر، چوہدری صوفی محمد امین، چئیرمین چوہدری محمد اشرف، چوہدری محمد اعظم، چوہدری شیراز، چوہدری عارف، چوہدری پرویز، حاجی منظور حسین، پاکستان پیپلز پارٹی کشمیر فورم برطانیہ کے چئیرمین چوہدری محمد بشیر، کونسلر راجہ سلیم، صدر مسلم کانفرنس لوٹن، راجہ محمد یعقوب خان، چوہدری صغیر پوٹھی، ایجوکیشن افسر شکیل رفیق تھوتھالوی، اشرف چغتائی، طارق چوہدری تحریک کشمیر کے سینئر نائب صدر چوہدری محمد شریف، پی پی کے چوہدری محمد تاج سمروڑ نے اس تعزیتی ریفرنس میں بطور خاص شرکت کی۔