مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
قائد کشمیر نے خطے میں اصولوں کی سیاست متعارف کرائی:چوہدری نورحسین کی یاد میں تعزیتی ریفرنس
ہائی ویکمب ... سابق وزیر اعظم آزاد کشمیر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ حکمران جو کچھ کرتے ہیں عوام انتخابات میں انہیں بتا دیتے ہیں، عوام سے بڑا منصف کوئی نہیں ہوتا انہیں جس دن بھی موقع ملتا ہے وہ حق راے دہی کی بدولت اسے ظاہر کردیتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے برطانیہ پہنچنے کے بعد ہائی ویکمب میں بزرگ کشمیری رہنما چوہدری نور حسین کی یاد میں منعقدہ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جس کا اہتمام سابق میئر ہائی ویکمب کونسلر چوہدری اللہ دتہ نے کیا تھا۔ اس سے قبل وہ ہیتھرو ایئر پورٹ پہنچے تو انکے چاہنے والوں کی کثیر تعداد نے ان کا استقبال کیا جن میں انکے انتہائی قریبی ساتھی چوہدری ماجد اسماعیل ، چوہدری حکمداد، سابق پولیٹیکل ایڈوایئزر چوہدری شعبان، مشیر وزیر اعظم چوہدری اخلاق احمد، چوہدری دلپذیر، چوہدری فاروق احمد، چوہدری عارف جنیالوی، چوہدری محمد ضارب، صدر پی پی ایلزبری چوہدری محمد الیاس، صدر پی پی وٹفورڈ چوہدری عبدالمجید، صدر پی پی لوٹن چوہدری محمد شفاعت یوٹھی، سعید بھٹی، راجہ رحمت، چیف آرگنائزر پی پی سائوتھ زون چوہدری آصف اقبال، چیئرمین ابدالی آرگنائزیشن برطانیہ، چوہدری ظفر اقبال گنگالوی و دیگر شامل تھے۔ ہائی ویکمب میں اپنے بزرگوار اور معروف کشمیری رہنما چوہدری نور حسین کی یاد میں منعقدی تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ مرحوم نے ہمیشہ آزادی کشمیر اور کشمیر کاز کو اپنی زندگی کا محور بنائے رکھا۔ دونوں اطراف کے مسلمہ لیڈر ہونے کی صورت میں انکی بات کو خاص وزن حاصل ہوتا تھا، بیرسٹر سلطان محمود نے کہا کہ میری تربیت کرتے ہوئے انکا یہی کہنا تھا کہ اپنی دھرتی ماں پر کسی صورت آنچ نہیں آنے دینی، اقتدار آنی جانی چیز ہے ملک و قام کی آزادی، خودمختاری اور خوشحالی کیلئے کبھی اقتدار کو ترجیح نہیں دینا اور دنیا نے دیکھا کہ آزاد کشمیر کا واحد سیاستدان ہوں جس نے دنیا کے کونے کونے میں جا کر کشمیر کا مقدمہ لڑا لیکن اقتدار کی خواہش نہ کی۔ انہوں نے کہا آج بھی انکی حکمرانوں سے لڑائی ہے تو صرف آزادی کے بیس کیمپ کی حفاظت اور وعوام کی خوشحالی کیلئے ہے، میں نے ارباب اختیار کو ہر طرح کے ثبوت مہیا کر دیے ہیں اب یہ ان کا کام ہے کہ وہ کب ان شکست خوردہ حکمرانوں کا احتساب کرتے ہیں۔ میزبان سابق میئر ہائی ویکمب چوہدری اللہ دتہ نے چوہدری نور حسین مرحوم کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ قائد کشمیر نے خطے میں رواداری اور اصولوں کی سیاست متعارف کرائی، انہوں نے اپنے ساتھیوں کیلئے تو ہمیشہ اقتدار کا راستہ ہموار کیا لیکن خود کبھی اسکی طلب نہ کی۔ اس موقع پر خطیب مرکزی مسجد نے چوہدری نور حسین مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعا بھی کرائی۔