مقبول خبریں
آشٹن گروپ کی جانب سے پوٹھواری شعر و شاعری کی محفل،شعرا نے خوب داد وصول کی
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سعودی عرب میں اعلیٰ عہدوں پر فائز 620 سرکاری افسروں کی ڈگریاں جعلی یا مشکوک
ریاض… جعلی ڈگریاں صرف پاکستان کا ہی مسلہ نہیں بلکہ سعودی عرب میں سرکاری افسروں کی جعلی ڈگریوں کا اسکینڈل سامنے آیا ہے۔ مختلف محکموں کے 620 افسران کی ڈگریاں جعلی ثابت ہوگئیں۔ کارروائی کے خوف سے 2 ہزار سے زائد سرکاری عہدے داروں نے ریٹائرمنٹ کی درخواست کردی۔سعودی میڈیا کے مطابق محکمہ تعلیم اور دیگر محکموں کی جانب سے سرکاری عہدے داروں کی ڈگریوں کی جانچ پڑتال کی مہم جاری ہے۔ مہم کے دوران اب اتک اعلیٰ عہدوں پر فائز 620 ایسے سرکاری افسروں کا انکشاف ہوا ہے جن کی ڈگریاں جعلی یا مشکوک ہیں۔ ان افسروں میں سے 234 عہدے داروں کی ڈاکٹریٹ کی ڈگریاں بھی جعلی ہیں۔ جعلی اور مشکوک ڈگری والوں میں 5 مختلف محکموں کے انڈر سیکرٹری، ڈائریکٹر اور جنرل انڈر سیکرٹری شامل ہیں۔ سعودی میڈیا کے مطابق جعلی ڈگری کے خلاف کارروائی کے خوف سے تقریباً 2 ہزار سرکاری افسروں نے قبل از وقت ریٹائرمنٹ کی درخواست دے دی ہے۔