مقبول خبریں
ن لیگی راہنما میاں عبدالغفار کا رکن قومی اسمبلی پیر سیدعمران احمد شاہ کے اعزاز میں عشائیہ
کرالے میں اوورسیزپاکستانیوں کی میٹنگ،مختلف طبقہ ہائے فکر کے افراد کی شرکت
دعوت اسلامی برمنگھم کے زیر اہتمام خراب موسم کے باوجودجشن عید میلاد النبیؐ کا جلوس
برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان میں زبردست پذیرائی، وزیر اعظم اور صدر مملکت سے ملاقاتیں
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سردار عتیق کی قیادت میں جدوجہد آزادی پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے:رہنما ایم سی
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
مقبوضہ کشمیرمظالم:عالمی طاقتوں، اقوام متحدہ کو کردار ادا کرنا ہو گا : ڈاکٹر سجاد کریم
بلقیس بانو زندہ کیوں؟؟؟؟؟
پکچرگیلری
Advertisement
سعودی عرب میں اعلیٰ عہدوں پر فائز 620 سرکاری افسروں کی ڈگریاں جعلی یا مشکوک
ریاض… جعلی ڈگریاں صرف پاکستان کا ہی مسلہ نہیں بلکہ سعودی عرب میں سرکاری افسروں کی جعلی ڈگریوں کا اسکینڈل سامنے آیا ہے۔ مختلف محکموں کے 620 افسران کی ڈگریاں جعلی ثابت ہوگئیں۔ کارروائی کے خوف سے 2 ہزار سے زائد سرکاری عہدے داروں نے ریٹائرمنٹ کی درخواست کردی۔سعودی میڈیا کے مطابق محکمہ تعلیم اور دیگر محکموں کی جانب سے سرکاری عہدے داروں کی ڈگریوں کی جانچ پڑتال کی مہم جاری ہے۔ مہم کے دوران اب اتک اعلیٰ عہدوں پر فائز 620 ایسے سرکاری افسروں کا انکشاف ہوا ہے جن کی ڈگریاں جعلی یا مشکوک ہیں۔ ان افسروں میں سے 234 عہدے داروں کی ڈاکٹریٹ کی ڈگریاں بھی جعلی ہیں۔ جعلی اور مشکوک ڈگری والوں میں 5 مختلف محکموں کے انڈر سیکرٹری، ڈائریکٹر اور جنرل انڈر سیکرٹری شامل ہیں۔ سعودی میڈیا کے مطابق جعلی ڈگری کے خلاف کارروائی کے خوف سے تقریباً 2 ہزار سرکاری افسروں نے قبل از وقت ریٹائرمنٹ کی درخواست دے دی ہے۔