مقبول خبریں
مکس مارشل آرٹ کونسل اور چیریٹی آرگنائزیشن کے زیر اہتمام تقریب کا انعقاد
بریگزیٹ بحران :کنزرویٹو پارٹی کی تین خواتین ممبر کی آزاد گروپ میں شمولیت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برلن انٹرنیشنل فلم فیسٹیول چینی فلم بائی ری یان ہو اورآسٹریلین فلم 52 ٹیوزدیز کے نام
برلن ...64 ویں برلن انٹرنیشنل فلم فیسٹیول میں چینی فلم "بائی ری یان ہو" (سیاہ کوئلہ، پتلی برف) نے بہترین فلم کا گولڈن بیئر ایوارڈ جیت لیا ہے۔ چینی اداکار لیاؤ فین کو اسی فلم کے لیے بہترین اداکار جبکہ جاپانی فلم چیسائی آؤچی میں اداکاری کے لیے ہارو کوروکی کو بہترین اداکارہ قرار دیا گیا۔ آسٹریلین فلم 52 ٹیوزدیز رنر اپ رہی۔ ایوارڈز کا فیصلہ آٹھ رکنی جیوری نے کیا جس کے سربراہ اس سال امریکی ہدایت کار اور فلم ساز جیمز شیمس تھے۔ میلے کے اختتام پر ویس اینڈرسن کی فلم گرینڈ بوڈاپسٹ ہوٹل کو ’سلور بیئر گرینڈ جیوری پرائز‘ دیا گیا جبکہ شائقین کی پسندیدہ فلم کا ایوارڈ ایک دلہن کے اغوا کی کہانی بیان کرنے والی ایتھیوپیا کی فلم ’ڈفریٹ‘ کو دیا گیا برطانوی ہدایت کار کین لوچ کو فلمی دنیا میں ان کی خدمات پر اعزازی گولڈن بیئر ایوارڈ بھی دیا گیا۔ برلن فلم فیسٹیول کا شمار دنیا کے قدیم اور بڑے فلمی میلوں میں ہوتا ہے تاہم اس سال ناقدین نے میلے میں شریک فلموں کے معیار پر نکتہ چینی کی تھی۔ 11 دن تک جاری رہنے والے فلمی میلے میں 400 کے قریب فلموں کی نمائش کی گئی جن میں سے 23 انعام کے لیے مقابلے میں شامل ہوئیں۔