مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پلوامہ میں نمازیوں پر تشدد‘ قرآن پاک کی بےحرمتی اورمظاہرین کےقتل کےخلاف احتجاج جاری
سرینگر...مقبوضہ کشمیر کے قصبے بڈگام میں بھارتی فوج کے تشدد سے زخمی خاتون دم توڑ گئی۔ جس پر زبردست مظاہرے ہوئے۔ علاقے میں پھر سے کرفےو نافذ کردیا گیا ہے جبکہ پلوامہ میں بھارتی فوج کی طرف سے پرامن احتجاجی مظاہرین پر طاقت کے وحشیانہ استعمال کے نتیجے میں ایک صحافی سمیت کم از کم 4 افراد زخمی ہو گئے۔ تفصلات کے مطابق بھارتی فوج نے پلوامہ میں نمازیوں پر تشدد‘ قرآن پاک کی بے حرمتی اور مظاہرین کے قتل کے گول میں پیش آنے والے حالیہ المناک واقعے کے خلاف احتجاج کرنے والے افراد کو منتشر کرنے کیلیے شدید لاٹھی چارج کیا اورآنسو گیس کے گولے پھینکے جس سے ایک مقامی صحافی محمد اشرف سمیت 4 افراد زخمی ہو گئے۔ پولیس نے متعدد افراد کو گرفتارکرلیا۔ ادھر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں زخمی ہونے والی ایک خاتون فاطمہ بانو کے جاں بحق ہونے کے بعد ضلع بڈگام میں کرفیو نافذ کر دیا گیا۔ 5روز تک صورہ ہسپتال میں موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد ڈیڈنہ بڈگام کی خاتون نے زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ دیا پولیس نے شہید ہونے والی خاتون کی میت کرفیو کے دوران ہی ورثا کے سپرد کی اور اسے پولیس پہرے میں ہی سپرد خاک کیا گیا۔ دوسری جانب حریت کانفرنس کے چیئرمین علی گیلانی نے کہا کہ جموں کشمیر میں بھارت کی مسلح فورسز کے ہاتھوں خواتین کی آبروریزی کا ایک نہ تھمنے والا سلسلہ آج بھی جاری ہے اور کنن پوشہ پورہ اور شوپیاں کی آسیہ اور نیلوفر جیسے واقعات کے لئے ذمہ دار لوگوں کو کیفر کردار تک نہ پہنچائے جانے کی وجہ سے دوسرے وردی پوش اہلکاروں کو حوصلہ مل رہا ہے اور وہ بے دھڑک اس قسم کے بھیانک جرائم کا ارتکاب کر رہے ہیں۔مقبوضہ کشمیر میں نامعلوم مسلح افراد کی طرف سے سوپور قصبہ میں ایک سپیشل پولیس افسر (ایس پی او) کو ہلاک کر دینے کی خبریں بھی گرم ہیں ۔ حریت کانفرنس (گ) کے چیئرمین سید علی گیلانی کا پولیس کے پہرے میں طبی معائنہ کیا گیا۔ گیلانی گزشتہ روز پولیس کے سخت پہرے میں طبی معائنے کے لیے ڈاکٹر محمد سلطان کھورو کے کلینک واقع قمرواری گئے، جہاں ان کے مکمل چیک اپ کے علاوہ کئی ضروری ٹیسٹ بھی کرائے گئے۔ اس موقع پر ڈاکٹر نعیم الظفر گیلانی اور راجہ معراج الدین بھی ان کے ہمراہ تھے۔ حریت ترجمان ایاز اکبر نے بتایا کہ سید علی گیلانی کو نہ صرف بھاری پولیس نرغے میں وہاں تک لے جایا گیا، بلکہ اس موقعے پر ان تمام پولیس تھانوں کو بھی متحرک کیا گیا تھا، جہاں سے گزر کر انہیں کلینک تک جانا تھا، جس وقت متعلقہ ڈاکٹر آزادی پسند رہنما کا طبی معائنہ کررہے تھے، اس وقت بھی باہر پولیس کی ایک بھاری جمعیت مستعد کھڑی رہی۔ علی گیلانی نے کہا کہ جموں کشمیر میں بھارت کی مسلح فورسز کے ہاتھوں خواتین کی آبروریزی کا ایک نہ تھمنے والا سلسلہ آج بھی جاری ہے اور کنن پوشہ پورہ اور شوپیاں کی آسیہ اور نیلوفر جیسے واقعات کے لئے ذمہ دار لوگوں کو کیفر کردار تک نہ پہنچائے جانے کی وجہ سے دوسرے وردی پوش اہلکاروں کو حوصلہ مل رہا ہے اور وہ بے دھڑک اس قسم کے بھیانک جرائم کا ارتکاب کر رہے ہیں۔