مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
’کراچی میں حملہ ہم نے کیا‘ طالبان نے ذمہ داری قبول کر لی
کراچی…تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان نے کراچی میں پولیس بس پر حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ اس حملے میں11 پولیس اہلکار ہلاک اور 45 سے زیادہ زخمی ہوئے تھے۔تحریک طالبان کے ترجمان شاہد اللہ شاہد نے ذرائع ابلاغ کو جاری کیے جانے والے ایک بیان میں کہا ہے: ’تحریک طالبان پاکستان کراچی میں رینجرز کی گاڑی پر ہونے والی کارروائی کی ذمہ داری قبول کرتی ہے۔‘تحریک طالبان کے ترجمان نے کہا یہ کارروائی اپنے ساتھیوں کے پولیس اور رینجرز کے ہاتھوں مارے جانے کے انتقام میں کی گئی ہے۔طالبان کے ترجمان نے واضح کیا کہ حکومت اور طالبان کے درمیان باقاعدہ جنگ بندی ہونے تک اس طرح کی کارروائیاں جاری رہیں گی۔حکومت اور طالبان کے مابین مذاکرات شروع ہونے کے بعد طالبان ہر دہشت گردانہ کارروائی سے لاتعلقی کا اظہار کر رہے تھے۔جمعرات کی صبح کراچی میں پولیس کی بس کے قریب ہونے والے ایک دھماکے میں کم از کم 11 پولیس اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔سرکاری ٹی وی کے مطابق یہ دھماکہ جمعرات کی صبح ملیر میں شاہ لطیف ٹاؤن کے علاقے میں واقع رزاق آباد پولیس تربیتی مرکز کے قریب ہوا ہے۔