مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
’کراچی میں حملہ ہم نے کیا‘ طالبان نے ذمہ داری قبول کر لی
کراچی…تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان نے کراچی میں پولیس بس پر حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ اس حملے میں11 پولیس اہلکار ہلاک اور 45 سے زیادہ زخمی ہوئے تھے۔تحریک طالبان کے ترجمان شاہد اللہ شاہد نے ذرائع ابلاغ کو جاری کیے جانے والے ایک بیان میں کہا ہے: ’تحریک طالبان پاکستان کراچی میں رینجرز کی گاڑی پر ہونے والی کارروائی کی ذمہ داری قبول کرتی ہے۔‘تحریک طالبان کے ترجمان نے کہا یہ کارروائی اپنے ساتھیوں کے پولیس اور رینجرز کے ہاتھوں مارے جانے کے انتقام میں کی گئی ہے۔طالبان کے ترجمان نے واضح کیا کہ حکومت اور طالبان کے درمیان باقاعدہ جنگ بندی ہونے تک اس طرح کی کارروائیاں جاری رہیں گی۔حکومت اور طالبان کے مابین مذاکرات شروع ہونے کے بعد طالبان ہر دہشت گردانہ کارروائی سے لاتعلقی کا اظہار کر رہے تھے۔جمعرات کی صبح کراچی میں پولیس کی بس کے قریب ہونے والے ایک دھماکے میں کم از کم 11 پولیس اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔سرکاری ٹی وی کے مطابق یہ دھماکہ جمعرات کی صبح ملیر میں شاہ لطیف ٹاؤن کے علاقے میں واقع رزاق آباد پولیس تربیتی مرکز کے قریب ہوا ہے۔