مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
’کراچی میں حملہ ہم نے کیا‘ طالبان نے ذمہ داری قبول کر لی
کراچی…تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان نے کراچی میں پولیس بس پر حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔ اس حملے میں11 پولیس اہلکار ہلاک اور 45 سے زیادہ زخمی ہوئے تھے۔تحریک طالبان کے ترجمان شاہد اللہ شاہد نے ذرائع ابلاغ کو جاری کیے جانے والے ایک بیان میں کہا ہے: ’تحریک طالبان پاکستان کراچی میں رینجرز کی گاڑی پر ہونے والی کارروائی کی ذمہ داری قبول کرتی ہے۔‘تحریک طالبان کے ترجمان نے کہا یہ کارروائی اپنے ساتھیوں کے پولیس اور رینجرز کے ہاتھوں مارے جانے کے انتقام میں کی گئی ہے۔طالبان کے ترجمان نے واضح کیا کہ حکومت اور طالبان کے درمیان باقاعدہ جنگ بندی ہونے تک اس طرح کی کارروائیاں جاری رہیں گی۔حکومت اور طالبان کے مابین مذاکرات شروع ہونے کے بعد طالبان ہر دہشت گردانہ کارروائی سے لاتعلقی کا اظہار کر رہے تھے۔جمعرات کی صبح کراچی میں پولیس کی بس کے قریب ہونے والے ایک دھماکے میں کم از کم 11 پولیس اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں۔سرکاری ٹی وی کے مطابق یہ دھماکہ جمعرات کی صبح ملیر میں شاہ لطیف ٹاؤن کے علاقے میں واقع رزاق آباد پولیس تربیتی مرکز کے قریب ہوا ہے۔