مقبول خبریں
دی سنٹر آف ویلبینگ ، ٹریننگ اینڈ کلچر کے زیر اہتمام دماغی امراض سے آگاہی بارے ورکشاپ
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
جس لڑکی نے خواب دکھائے وہ لڑکی نابینا تھی!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سندھ فیسٹیول نے پاکستان اور بھارت کے لوگوں کو یکجا کرنے کا موقع فراہم کیا ہے ، شبانہ اعظمی
کراچی...بھارت سے آئی ہوئی معروف اداکارہ شبانہ اعظمی تین روزہ دورے کے بعد کراچی سے نجی ائیر لائن کی پرواز کے ذریعے دبئی روانہ ہوگئیں جہاں سے وہ بھارت واپس چلی جائیں گی ۔ شبانہ اعظمی سندھ کلچرل فیسٹیول کے خصوصی پروگرام انٹرنیشنل فلم فیسٹیول میں شرکت کیلئے خصوصی دعوت پر کراچی آئی تھیں، اس دوران انہوں نے مسلسل دو دن تک نیو پلیکس سینماکراچی میں فلم فیسٹیول میں جج کے فرائض انجام دیے ۔دبئی روانگی کے وقت میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ کراچی سے حسین یادیں سمیٹ کر لے جارہی ہوں بہت جلد دوبارہ واپس آئوں گی ،یہاں پر دن کیسے گذرے پتا ہی نہیں چلا۔انکا کہنا تھا کہ سندھ فیسٹیول نے پاکستان اور بھارت کے لوگوں کو یکجا کرنے کا موقع فراہم کیا ہے میں امید کرتی ہوں کہ آئندہ بھی یہاں ایسے بڑے کلچرل فیسٹیول ہوتے رہیں گے جس میں دونوں ممالک کے فنکاروں کو بھی مل کر ساتھ کام کرنے کا موقع ملے گا۔دریں اثنا ایک ٹی وی انٹرویو میں رومان سے بھر پور شاعری کرنے والے شاعر جاوید اختر سے انکی بیوی شبانہ اعظمی نے شکوہ کیا ہے کہ جاوید اختر نے ان کیلئے کبھی کوئی شعر نہیں لکھا۔ شبانہ اعظمی سے سوال کیا گیا کہ جاوید اختر نے یہ گانا ’’ایک لڑکی کو دیکھا تو ایسا لگا‘‘ کیا آپ کے لیے لکھا تھا تو شبانہ اعظمی نے کہا کہ نہیں، یہ گانا انہوں نے منیشا کوئرالہ کیلئے لکھا تھا ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اس حوالے سے جاوید اختر کہتے ہیں کہ کوئی اگر سرکس میں کام کرتا ہو تو کیا وہ گھر میں الٹا لٹکا رہے گا۔ انہوں نے بتایا کہ انہیں کھانا پکانا نہیں آتا جس کی کمی وہ آج بھی محسوس کرتی ہیں۔