مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم انسانی حقوق کی تنظیموں کیلئے ایک کھلا چیلنج ہے: سجاد کریم ایم ای پی
مانچسٹر ... کشمیری 65 سال سے مسئلہ کشمیر کے حل اور بھارت کی زیادتیوں کے خلاف آواز بلند کر رہے ہیں۔ لیکن افسوس بھارت ٹس سے مس نہیں ہوا۔ یورپین پارلیمنٹ نے اپنا بھرپور کردار ادا کیا ہے اور مقدور بھر کوشش کی ہے کہ اس مسئلے کا کوئی پایئدار حل ڈھونڈا جائے، جب تک کشمیریوں کو انکا حق نہیں مل جاتا ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔ ان خیالات کا اظہار ممبر یورپی پارلیمنٹ اور فرینڈز آف پاکستان کے چیئرمین سجاد کریم نے پاکستان قونصلیٹ مانچسٹر کے زیر اہتمام کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے کیلئے پاکستان سنٹر لانگ سائیٹ مانچسٹر میں منعقدہ ایک تقریب میں کیا۔ نظامت کے فرائض کمیونٹی ویلفیئر کونسلر ساجد محمود قاضی نے سر انجام دیئے، تلاوت کلام پاک کی سعادت قاری جاوید نے حاصل کی جبکہ مہمان خصوصی ممبر آف یورپین پارلیمنٹ سجاد حیدر کریم تھے، انہوں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے مزیدکہا کہ بد قسمتی کی بات ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے اندر بھارتی سیکورٹی فورسز کی جارحیت ایک وحشیانہ اقدام ہے اور انسانی حقوق کی پامالی بین الاقوامی طاقتوں اور انسانی حقوق کی تنظیموں کیلئے ایک کھلا چیلنج ہونے کے ساتھ سخت آزمائش بھی ہے اور یہ مسئلہ جلد توجہ کا طالب ہے وگرنہ حالات کی سنگینی سے پوری دنیا متاثر ہو سکتی ہے،انہوں نے مزید کہا کہ کشمیریوں کو اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے عین مطابق حق خود ارادیت دیا جائے اور ایسا پاکستان اور بھارت دونوں کے مشترکہ مفاد میں ہے آخر میں انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنی سیاسی،شخصی،نظریاتی سوچ کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اتحاد و اتفاق کا عملی مظاہرہ کرنا چاہیے تاکہ ہماری آواز موثر طریقے سے بین الاقوامی سطح پر سنی جائے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے لارڈ نذیر احمد نے کہا کہ سعودی عرب پر جب بھی مشکل وقت آیا ہے تو سٹریٹجک حوالے سے پاکستان آرمی بھرپور مدد اور تعاون کرتی ہے اور انکے مفادات کو ذاتی سمجھ کر مکمل حفاظت کی جاتی ہے اور حال ہی میں سعودی عرب کی حکومت کی جانب سے انڈیا سے سیکورٹی پیکج بارے گفتگو و شنید سمجھ سے بالا تر ہے ہم اس کی سخت مذمت کرتے ہیں اور پاکستانی حکومت کو بھی اس بارے میں آواز اٹھانی چاہیے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ سعودی عرب اگر ایسا کرنے پر بضد ہے تو پھر اسے او آئی سی کی ممبر شپ سے فارغ کر دیا جائے،تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ممبر پارلیمنٹ جیرالڈ نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ جلد از جلد حل کرنے کیلئے بین الاقوامی طاقتوں کو انتہائی اقدام اٹھانا چاہیے،ممبر آف پارلیمنٹ یاسمین قریشی، بیرسٹر امجد ملک، راجہ آفتاب شریف، راجہ نجابت حسین نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کشمیریوں کی قربانیاں ضرور رنگ لائیں گی اور بہت جلد آزادی سے سکھ کا سانس لے سکیں گے، نارتھ ویسٹ سے یورپی پارلیمنٹ کے امیدوار واجد الطاف خان، مسلم لیگ (ن) برطانیہ چیئرمین آفتاب شریف، مسلم لیگ (ن) کے سینئر نایب صدر حمزہ باسط بٹ، ہارون کتیانہ، بلاول بٹ، چوہدری قمر بھٹی، محبوب خان، چوہدری مسرت علی، کونسلر عابد چوہان، کونسلر لطیف الرحمان، کونسلر رب نواز، ظفر اللہ راٹھور، سابق کونسلر سید امتیاز حسین برنلے، سالار ممتاز چشتی، امجد حسین مغل، میاں عبدالغفور اختر، محمد اعظم اولڈہم، ڈاکٹر یونس، مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری محمد بشیر رٹوی، تحریک انصاف کے عامر چشتی، جوہر کاظمی، محمد طفیل، ڈاکٹر اطہر، عالم پنوار، محمد نجیب وائی، راجہ فاروق احمد ہالینڈ، اپوا کی صدر مسز نصرت احمد، یاسمین ڈار، صلاح الدین چوہدری کے علاوہ بڑی تعداد میں مرد و خواتین نے شرکت کی۔ آخر میں مفتی فیض الرحمان نے پاکستان آزادی کشمیر اور امت مسلم ک اتحاد کے لیے جامع دعا کرائی۔ اس موقع پر ٹریڈ قونصل عامر تھہیم، ایجوکیشن اتاشی یاسر نقوی بھی موجود تھے۔آخر میں قونصل جنرل مانچسٹر ڈاکٹر ظہور احمد نے تمام مہمانان گرامی اور حاضرین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے شہداء کشمیر کیلئے خصوصی دعا کی۔ (بیورو رپورٹ: فیاض بشیر)